پاکستان میں سوا 2کروڑ نوجوان تمباکو نوشی کے عادی

September 9, 2017 2:04 pmViews: 3

سالانہ ایک لاکھ سے زائد افراد پھیپھڑوں کے کینسر، اسٹروک، دل اور سانس کی بیماری سے ہلاک ہوجاتے ہیں
سگریٹ زندگی کے 11منٹ ضائع کرتی ہے اوسط زندگی کے 10سال کم ہوجاتے ہیں
خیرپور(آن لائن) پاکستان تمباکو کو استعمال کرنے والے بڑے ممالک میں سے ایک ہے جہاں 22 ملین سے زائد نوجوان اس کا استعمال کررہے ہیں، جبکہ سالانہ ایک لاکھ سے زائد افراد پھیپھڑوں کے کینسر، اسٹروک، دل اور سانس کی بیماری کے سبب ہلاک ہو جاتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار سینئر روٹیرین شجاعت احمد صدیقی نے الفاروق اسکائوٹس اوپن گروپ خیرپور کی جانب سے نو ٹوبیکو مہم کے حوالے سے ایک تقریب سے خطاب کے موقع پر کیا۔ انہوں نے کہاکہ تمباکو نوشی کے ساتھ رہنے والا ایک گھنٹے میں جتنا تمباکو سونگھتا ہے وہ ایک سگریٹ پینے کے برابر ہے۔ طبی تحقیق کے مطابق سگریٹ زندگی کے 11 منٹ ضائع کرتی ہے۔ سگریٹ نوش کی زندگی کے اوسط 10 سال کم ہوجاتے ہیں۔ اس موقع پر ماہر فزیشن ڈاکٹر ظفر جتوئی نے کہاکہ پھیپھڑوں کی بیماری کی اہم وجہ تمباکو نوشی ہے، ٹی بی سینٹروں میں علاج کے لیے آنے والے مریضوں میں 60 فیصد سے زائد مریض تمباکو نوشی کے متاثر ہوتے ہیں۔