بدھ بھکشوں نے فوج کیساتھ مل کر گائوں جلا دیا ٗ برطانوی صحافی نے بھانڈا پھوڑ دیا

September 9, 2017 2:22 pmViews: 3

شرپسند نوجوانوں کو باہر نکلتے دیکھا جن کے ہاتھ میں چھریاں ٗ تلواریں بھی تھیں ٗ رپورٹر بی بی سی
ہمارے پوچھنے پر نوجوانوں نے تسلیم کیا کہ آگ انہوں نے حکومت کی سرپرستی میں لگائی ہے ٗ رپورٹ میں سنسنی خیز انکشافات
کراچی( مانیٹرنگ ڈیسک) میانمار میں روہنگیا مسلمانوں کا ایک اور گائوں نذر آتش کردیا گیا۔ ایران کے خبر رساں ادارے کے مطابق انتہا پسند بدھ بھگشوئوں نے فوج اور سیکورٹی اہلکاروں کی مدد سے مسلمانوں کے ایک اور گائوں کو آگ لگائی۔ ادھر بڑطانیہ کے سرکاری نشریاتی ادارے بی بی سی نے میانمار حکومت کے جھوٹ کا بھانڈا پھوڑ دیا۔ غیر ملکی صحافیوں کی ایک ٹیم کے ساتھ ارکان کے کچھ علاقوں کا دورہ کرنے والے بی بی سی کے رپورٹر کے مطابق ایک گائوں میں آگ لگی تھی اور جب ہم وہاں پہنچے تو وہاں شرپسند نوجوانوں کو باہر نکلتے دیکھا جن کے ہاتھوں میں چھریاں ‘تلواریں اور غلیلیں تھیں جب ان سے بات کی تو انہوں نے بتایا گیا کہ وہ بدھ مذہب کے ماننے والے ہیں۔ انہوں نے یہ بھی تسلیم کیا کہ آگ انہوں نے لگائی ہے جبکہ اس کام میں پولیس ان کی مدد کررہی ہے۔ بی بی سی کا کہنا ہے کہ روہنگیا مسلمانوں کا قتل عام اور ان کے گھروں کاجلانے والے بدھ شدت پسند ہیں جنہیں حکومتی سرپرستی حاصل ہے۔