ڈوب کر ہلاک ہونیوالے 12افراد کی تدفین پولیس نے ساحل سمندر پر دفعہ 144کو کمائی کا ذریعہ بنالیا

September 11, 2017 1:22 pmViews: 3

ہاکس بے،سینڈزپٹ،منوڑہ اور سی ویو پر تعینات پولیس ہلکار شہریوں سے کھلے عام رقم بٹورتے رہے
سمندر میں ڈوب کر ہلاک ہونے والے افراد کی نماز جنازہ میں میئر کراچی،حافظ نعیم الرحمن،عارف علوی ودیگر کی شرکت
کراچی (نیوز ڈیسک) کراچی پولیس نے ساحل سمندر پر دفعہ 114 کے نفاذ کو کمائی کا ذریعہ بنالیا جبکہ گزشتہ روز ہاکس بے میں ڈوب کر ہلاک ہوجانے والے افراد کو آہوں اور سسکیوں میں سپردخاک کردیا گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق سمندر میں ڈوب کر 12 افراد کی ہلاکت کے بعد دفعہ 144 کے نفاذ کو کراچی پولیس نے کمائی کا ذریعہ بنا لیا، اتوار کے روز ساحلوں پر شہریوں اور پولیس میں آنکھ مچولی جاری رہی، ہفتہ کے روز پکنک منانے کے لیے ہاکس بے جانے والی ایک ہی فیملی کے 12 افراد کی ہلاکت پر حکومت نے سمندر میں نہانے پر دفعہ 144 کے نفاذ پر سختی سے عملدرآمد کا حکم دیا، جس کی آڑ میں پولیس نے شہریوں کو لوٹنا شروع کردیا ہے۔ اتوار کے روز ہاکس بے، سینڈزپٹ، منوڑہ اور سی ویو پر تعینات پولیس اہلکار کھلے عام شہریوں سے رقم بٹورتے رہے، جس نے جرمانہ دیا وہ سمندر میں نہاتا رہا اور جس نے نہیں دیا وہ دور سے سمندر کو تکتا رہ گیا۔ دوسری جانب کراچی کے ساحل ہاکس بے پر ہفتہ کو سمندر میں ڈوب کر جاں بحق ہونے والے افراد کو آہوں اور سسکیوں کے ساتھ محمد شاہ قبرستان میں سپردخاک کردیا گیا اس موقع پر ہر آنکھ اشک بار تھی۔ قبل ازیں جاں بحق 11 افراد آمنہ طاہر، ایمان ناصر، پروین اسلم، صغراں بی بی، اقراء، سعود، طلحہ، آصف، علی عباد، عمیر اور حمزہ کی نماز جنازہ بعد نماز ظہر نارتھ ناظم آباد سیکٹر 9 باب الاسلام مسجد سے متصل گرائونڈ میں جبکہ ڈوبنے والے ایک نوجوان 35 سالہ عاطف کی نماز جنازہ بعد نماز عصر ناظم آباد نمبر 4 میں ادا کی گئی۔ نماز جنازہ میں مرحومین کے عزیز و اقارب، میئر کراچی وسیم اختر، پاک سرزمین پارٹی کراچی کے صدر آصف حسنین، امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن، تحریک انصاف سندھ کے صدر ڈاکٹر عارف علوی سمیت اہل علاقہ اور شہریوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ قبل ازیں جاں بحق افراد کی میتیں ایدھی سرد خانے سے گھر پہنچیں تو پورے محلے میں کہرام مچ گیا اس موقع پر ہر آنکھ اشکبار تھی۔ اہل محلہ کے مطابق 35 افراد پر مشتمل خاندان ہاکس بے پر موج مستی کرنے گیا جہاں خاندان کے 12 افراد موجوں کی لپیٹ میں آکر جان سے گئے۔