برمی سفیر کو نہیں نکالا تو عوام خود محاصرہ کرینگے، ثروت اعجازقادری

September 11, 2017 2:30 pmViews: 2

اقوام متحدہ کی خاموشی برما کے مسلمانوں کے تحفظ کیلئے ایکشن نہ لینا تعصب کو جنم دینا ہے
او آئی سی مظالم روکنے کیلئے کردار ادا کرے، بیداری مسلم مارچ سے خطاب
کراچی(اسٹاف رپورٹر) سربراہ پاکستان سنی تحریک محمد ثروت اعجاز قادری نے کہاہے کہ بیداری مسلم مارچ میں ٹھاٹھیں مارتا عوام کاسمندر برما کے مسلمانوں کی نسل کشی شدید مذمت کرتا ہے ،حکومت برما کے سفیر کو فوری طور پر ملک بدر کرئے اگر سفیرکو نہیں نکالا گیا تو عوام خود محاصرہ کرینگے اور ملک سے نکال دینگے ،اقوام متحدہ کی خاموشی برما کے مسلمانوں کے تحفظ کیلئے فوری ایکشن نہ لینا تعصب کو جنم دیتا ہے ،اقوام متحدہ خاموش تماشائی بننے کی بجائے بین الاقوامی قوانین کے تحت برما کے مظلوم مسلمانوں کے تحفظ کیلئے بلاتفریق اقدامات کرئے ،برما کے مسلمانوں پر مظالم کے خلاف مسلم حکمرانوں کی مجرمانہ خاموشی تشویشناک ہے ،او آئی سی خاموش رہنے کی بجائے مسلمانوں کے تحفظ اور برما ،کشمیر ،فلسطین میں مسلمانوں پر مظالم کو روکنے کیلئے آواز بلند کرئے ،برما میں انسانیت کے ساتھ ظلم کی انتہاہوچکی ہے ،بچوں کو تشدداور زندہ کاٹا جارہا ہے بچیوںکو درختوں پر لٹکایا جارہا ہے ،مردوں پر تیزب ڈال کر جلا یا جارہا ہے ،اسنانیت تڑپ رہی ہے اور انسانی حقو ق کے ٹھیکیدار آنکھ اور کان بند کئے ہوئے ہیں ،حکمران پانامہ اور اقامہ میں پڑے ہیں ،34ممالک کا فوجی اتحاد کررہاہے راحیل شریف برما کے مسلمانوں کے تحفظ کیلئے حکم دیں ہم جانیں قربان کرنے کو تیار ہیں ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے بیداری مسلم مارچ سے خطاب کرتے ہوئے کیا ،یاد رہے کہ بیداری مسلم مارچ کا آغاز ٹاور سے ہوا اور اختتام عالم شاہ بخاری کے مزار جامعہ کلاتھ پر ختم ہو ا اس موقع پر سینئر مرکزی رہنما محمد شاہد غوری ،ممتاز مذہبی اسکالر سید محمد علی شاہ ،علامہ اشرف گورمانی ،علامہ بشیر القادری ،اسماجی وتاجر رہنماایاز موتی والا دیگر بھی موجود تھے ،ثروت اعجاز قادری کا مارچ کے شرکاء سے خطاب میں کہنا تھا کہ برما کے سفیر کو ناپسندیدہ شخصیت قرار دیکر ملک بدر نہیں کیا گیا تو اگلا مارچ خیابان شمشیر کی طرف ہوگا جہاں برما قونصلیٹ موجود ہے۔