کیوں نہ اینکرز کے اثاثوں کی چھان بین کی جائے اسلام آباد ہائی کورٹ

February 22, 2018 12:13 pm0 commentsViews: 4

قوم کو معلوم ہونا چاہئے کہ کس نے کتنے قرضے لئے اور کتنے معاف کرائے، جسٹس شوکت صدیقی
جن کے پاس موٹر سائیکل کے پیٹرول کے پیسے نہیں تھے آج 2 لینڈ کروز کے مالک ہیں، عدالتی ریمارکس
اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) اسلام آباد ہائیکورٹ نے نجی ٹی وی چینل کے صحافی مطیع اللہ جان کے خلاف توہین عدالت کیس میں فیصلہ محفوظ کرلیا۔ بدھ کو اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے کیس کی سماعت کی، سماعت شروع ہوئی تو مطیع اللہ جان نے نیا معافی نامہ داخل کرایا، عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ٹاک شوز میں دوسروں کے گریبان میں جھانکنے والوں کو اپنے گریبانوں میں بھی جھانکنا چاہیے، کیوں نہ اینکرز اور میڈیا مالکان کے اثاثوں کی چھان بین کیلئے کمیشن بنادیا جائے قوم کو معلوم ہونا چاہیے کہ اینکر نے کتنے قرضے لئے اور کتنے معاف کرائے، جن کے پاس موٹر سائیکل میں پیٹرول کے پیسے نہیں تھے آج دولینڈ کروزرز کے مالک ہیں، یہ بھی سامنے آنا چاہیے کہ کس کی بیگم کو منہ دکھائی میں بنگلہ ملا، صحافی کا قلم بکتا ہے تو قوم کی حرمت بکتی ہے۔ عدالت نے کیس پر فیصلہ محفوظ کرلیا ہے۔