پی ایس ایل کے مزید2 میچوں کا فیصلہ

February 24, 2018 11:26 am0 commentsViews: 4

کراچی کنگز نے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز اور ملتان سلطان نے لاہور قلندر کو شکست دیدی
دبئی میں کراچی کنگز نے پہلے کھیلتے ہوئے 150 رنز بنائے، جواب میں کوئٹہ گلیڈی ایٹر 130 رنز بنا سکی، شاہد آفریدی کی بیٹنگ ناکام، 4 رنز بناسکے
ملتان سلطان کی مسلسل دوسری فتح، پہلے کھیلتے ہوئے 5 ووکٹوں پر 179 رنز بنائے جواب میں لاہور قلندرکی ٹیم 136 رنز پر ڈھیر ہوگئی، جنید خان اور عمران طاہر کی شاندار بولنگ
دبئی (اسپورٹس ڈیسک) جنید خان کی شاندار ہیٹ ٹرک کی بدولت ملتان سلطانز نے لاہور قلندر کو 43 رنز سے شکست دے کر پاکستان سپر لیگ میں مسلسل دوسری کامیابی حاصل کرلی، جبکہ کراچی کنگز نے اپنے پہلے میچ میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو 19 رنز سے ہرا کر فتح کی بنیاد رکھ دی۔ دبئی میں کھیلے گئے سپر لیگ کے تیسرے میچ میں ملتان نے پہلے کھیلتے ہوئے 5 وکٹوں پر 179 رنز بنائے جس میں کمارسنگا کارا کے 63، کپتان شعیب ملک کے 48 اور احمد شہزاد کے 38 رنز شامل تھے۔ 180 رنز ہدف کے تعاقب میں قومی فاسٹ بولر جنید خان اور جنوبی افریقی اسپنر عمران طاہر کی شاندار بولنگ کے سامنے لاہور قلندر کی ٹیم 136 رنز پر ڈھیر ہوگئی۔ 16 اوور میں لاہور قلندر کے 6 وکٹوں پر 135 رنز تھے اور اسے جیت کے لیے 4 اوورز میں 44 رنز چاہیے تھے، لاہور کی جانب سے عمر اکمل 31 کے ساتھ نمایاں اسکورر رہے، جبکہ عمران طاہر کو تین ابتدائی بیٹسمین ٹھکانے لگانے پر میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔ قبل ازیں کراچی کنگز نے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو 19 رنز سے شکست دے دی۔ کراچی کنگز نے پہلے کھیلتے ہوئے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو جیت کے لیے 150 رنز کا ہدف دیا جس کے جواب میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی ٹیم صرف 130 رنز ہی بنا سکی۔ کپتان سرفراز احمد کو شاہد آفریدی نے ایل بی ڈبلیو کیا، 70 رنز کے مجموعی اسکور پر عمر امین 31 رنز بنا کر آئوٹ ہوئے۔ محمد نواز نے جارحانہ کھیل کا مظاہرہ کیا اور ٹیم کا اسکور آگے بڑھایا تاہم وہ 30 رنز بنا کر 113 کے مجموعی اسکور پر آئوٹ ہوگئے، جبکہ حسن علی نے 17 رنز بنائے۔ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی ٹیم مقررہ اوورز میں 9 وکٹوں کے نقصان پر 130 رنز ہی بنا سکی۔ اس سے قبل کراچی کنگز نے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے خلاف ٹاس جیت کر بیٹنگ کا فیصلہ کیا تو اننگز کا آغاز جوڈینلی اور خرم منظور نے کیا، تاہم اوپنرز خاص کارکردگی کا مظاہرہ نہ کر سکے اور جوڈینلی 34 کے مجموعی اسکور پر 14 رنز بنا کر رن آئوٹ ہوئے، ون ڈائون آنے والے بابر اعظم بھی زیادہ دیر تک وکٹ پر کھڑے نہ رہ سکے اور صرف 10 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئے۔ خرم منظور 35 رنز بنانے کے بعد 83 کے مجموعی اسکور پر آئوٹ ہوگئے۔ 83 کے مجموعی اسکور پر 3 وکٹیں گرنے کے بعد روی بوپارہ اور انگرام نے جارحانہ کھیل کا مظاہرہ کیا اور 48 رنز کی شراکت قائم کی تاہم بوپارہ 24 رنز بنا کر آئوٹ ہوگئے، جبکہ انگرام نے 21 گیندوں پر 41 رنز کی اننگز کھیلی اور 131 کے مجموعی اسکور پر آئوٹ ہوگئے۔ کپتان عماد وسیم اور شاہد آفریدی بھی خاص کارکردگی کا مظاہرہ نہ دکھا سکے، عماد وسیم نے 2 اور شاہد آفریدی نے صرف 4 رنز بنائے۔