مسافر بسوں اور ٹرکوں کو لوٹنے والے 3لیاری گینگسٹر گرفتار

June 13, 2018 1:49 pm0 commentsViews: 5

ملزمان عذیر بلوچ گروپ سے تعلق رکھتے ہیں، قبضے سے اسلحہ اور دستی بم برآمد، پولیس افسر اور نوجوان لڑکی کے قتل کا اعتراف کرلیا
پاک کالونی سے گرفتار شدگان کاروباری افراد کو شارٹ ٹائم کیلئے اغواء ،لڑکی کے گینگ ریپ اور دیگر سنگین جرائم میں ملوث ہیں
کراچی (کرائم رپورٹر)پاک کالونی پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے لیاری گینگ وار عذیر بلوچ گروپ کے تین خطرناک ملزمان کو گرفتار کرکے انکے قبضے سے اسلحہ اور دستی بم برآمد کرلیا، ملزمان نے پولیس کے اے ایس آئی اور نوجوان لڑکی کو قتل کرنے کے علاوہ شارٹ ٹرم کڈنیپنگ سمیت دیگر وارداتوں کا اعتراف کیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق پاک کالونی پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے لیاری گینگ وار کے تین ملزمان کو گرفتار کرکے انکے قبضے سے اسلحہ ، ہینڈ گرنیڈ برآمد کرلیا، پولیس کا کہنا ہے کہ گرفتار ہونے والے ملزمان مولا بخش عرف مولو، اکبر عرف ککی اور مولا بخش کا تعلق لیاری گینگ وار کے عذیر جان بلوچ گروپ سے ہے ، ملزمان بھتہ خوری ، اغواء، قتل و زنا جیسے کئی سنگین جرائم میں ملوث ہیں ، ملزمان شیرشاہ کباڑی مارکیٹ و لیاری کے کئی کاروباری شخصیات کو شارٹ ٹرم اغواء برائے تاوان کے لئے اغواء کے لیاری و جہان آباد کے علاقہ میں رکھا کرتے تھے اور تاوان نہ ملنے پر مارنے کا بھی انکشاف کیا ہے ، ملزمان اپنے دیگر ساتھیوں کے ہمراہ سائٹ گلبائی سے چاول و چھالیہ کے ٹرک و بلوچستان سے آنے والی کوچوں کو اغواء کرکے لیاری جہان آباد کے علاقہ لے جاکر مال لوٹا کرتے تھے ملزمان نے سال2012میں شیرشاہ میں ایک واردات کے دوران پولیس پارٹی پر فائرنگ کی تھی جس کے نتیجے میں اے ایس آئی رحیم اللہ شہید ، پولیس اہلکار وزیر سلطان اور ایک بچہ زخمی ہوا تھا ، ملزمان نے مخبری کے شبہ میں لیاری جنرل اسپتال کے قریب سے لڑکی کو اغواء کرنے کے بعد کلاکوٹ کے علاقے میں لاکر لڑکی کے ساتھ گینگ ریپ کرنے کے بعد اس لڑکی کو آگرا تاج P-1اسٹاپ کے پاس لے جاکر گولی مار کر قتل کردیا تھا ، ملزمان نے اس قسم کے اغواء کے بعد گینگ کے انکشاف کئے ہیں ملزمان نے سائٹ بی کے علاقے میں پاک کالونی میں تعینات پولیس اہلکار میاں خان کو ڈیوٹی پر آتے وقت فائرنگ کرکے زخمی کیا تھا، ملزمان سے مزید تفتیش کی جارہی ہے۔