عمران خان پر حملے کا خطرہ ٗ مظاہرین سے نمٹنے کیلئے رینجرز طلب

June 21, 2018 6:24 pm0 commentsViews: 36

بنی گالہ میں تحریک انصاف کے کارکنوں کا ٹکٹوں کی تقسیم کے معاملے پر احتجاج اور دھرنا جاری ٗ پرتشدد کارروائیاں ہوسکتی ہیں ٗ رہنمائوں نے خدشہ ظاہر کردیا
پی ٹی آئی چیئرمین کارکنوں کے احتجاج کے باعث اپنی رہائش گاہ میں محصور ہوچکے ہیں ٗ شر پسند عناصر کی جانب سے دھرنے کا فائدہ اٹھا کر صورتحال خراب کرنے کا خدشہ ہے ٗ رہائش گاہ کے باہر خار دار تاریں اور بیریئر ز لگا دئیے گئے ٗ پولیس کو کسی کو آگے نہ آنے دینے کی ہدایت کردی گئی
احتجاجی کارکنوں کے مطالبات نظر انداز ٗ عمران خان کے قریبی ساتھیوں اور سینئر رہنمائوں نے دھرنا دینے والے پارٹی کارکنوں اور ان کو احتجاج کیلئے بھیجنے والے رہنمائوں کیخلاف کارروائی کیلئے فہرستیں تیار کرلیں ٗ تحریک انصاف کی جانب سے آج انتخابی امیدواروں کی حتمی فہرست جاری ہونے کا امکان ہے ٗ ذرائع
اسلام آباد( مانیٹرنگ ڈیسک) چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کی رہائش گاہ کے باہر پارٹی کارکنوں کا احتجاج جاری ہے جبکہ شرپسند عناصر کی جانب سے احتجاج کا فائدہ اٹھاتے ہوئے عمران خان پر حملے کا خطرہ ہے۔ اطلاعات کے مطابق عمران خان کا رکنوں کے دھرنے کے باعث کئی روز سے اپنی رہائش گاہ میں محصور ہوچکے ہیں اور پی ٹی آئی کے سرکرہ رہنمائوں نے گھمبیر ہوئی صورتحال سے نمٹنے کیلئے سر جوڑ لئے ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ عمران خان پھر پرانے موقف پر ڈٹ گئے ہیں اور انہوں نے ٹکٹوں کی تقسیم پر نظر ثانی نہ کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے بنی گالہ عمران خان کی رہائش گاہ کے باہر بدھ کو خاردار تار لگا کر راستے مکمل بند کردیئے گئے ۔ پولیس کو کسی بھی شخص کو بغیر اجازت بنی گالہ کے بیریئر سے آگے نہ جانے دینے کا حکم دیا گیا ہے۔ پی ٹی آئی کی جانب سے رینجرز طلبی کیلئے لکھا گیا خط بھی سامنے آگیا ہے۔ جس میں کہا گیا کہ مظاہرین سے نمٹنے کیلئے300 اہلکار بھیجے جائیں تاہم رینجرز کو فوری طور پرمتعین نہیں کیا گیا۔ پولیس نفری منگل کی شب ہی بڑھادی گئی تھی۔ عمران خان نے بدھ کو خاردار تاروں اور سیکورٹی اہلکاروں کی حفاظت میں سندھ و خیبر پختونخوا کے پارلیمانی بورڈ ز اجلاسوں کی صدارت کی۔ تحریک انصاف نے مزید امیدواروں کے ناموں سمیت مکمل فہرستوں کا اعلان آج کرنے کی یقین دہانی کرارکھی ہے۔ ذرائع کے مطابق عمران خان کے قریبی ساتھیوں اور سینئر پارٹی رہنمائوں نے پارٹی سربراہ عمران خان کی رہائش گاہ بنی گالہ پر احتجاج کرنے والے کارکنوں کے مطالبات نظر انداز کرتے ہوئے ٹکٹوں پر فیصلے بدلنے کے بجائے کارکنوں خاص طو رپر انہیں احتجاج کیلئے بھیجنے والوں کیخلاف کارروائی کی تیاری شروع کردی۔ احتجاجی کارکنوں اور ان کے پس پردہ رہنمائوں کی فہرستیں تیار کرلی گئی ہیں۔ کارکنوں سے نمٹنے کیلئے سخت اقدامات کا فیصلہ بھی کرلیا گیا ہے۔ دوسری طرف تحریک انصاف کے مرکزی رہنمائوں نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ احتجاج کی آڑ میں پر تشدد کارروائیاں ہوسکتی ہیں اس لئے محتاط رہنے کی ضرورت ہے مخالفین صورتحال کا فائدہ اٹھاسکتے ہیں۔