نوسر باز گروہ نے ایزی پیسہ کے بہانے دکاندار وں کو لوٹ لیا

September 18, 2018 12:38 pm0 commentsViews: 6

ملزمان نے الگ الگ وارداتوں میں موبائل فون پر آن لائن کے ذریعے رقوم بھجوانے کے بجائے دکاندار وں کے پیسے ہتھیا لئے
پولیس گلستان جوہر کے دکانداروں کو چونا لگانے والے ملزمان کا سراغ لگانے میں ناکام
کراچی (کرائم ڈیسک) گلستان جوہر میں نوسرباز گروہ سرگرم ہوگیا، گروہنے چند روز میں 3 موبائل فون کے دکانداروں کو چونا لگا دیا، گروہ نے دکانداروں کو آن لائن رقم منتقل کرنے کے بہانے لوٹا، ایک دکاندار سے رقم لوٹنے کا مقدمہ شاہراہ فیصل تھانے میں درج کرایا ہے تاہم پولیس اب تک ملزمان کا سراغ لگانے میں ناکام ہے۔ دکانداروں نے گروہ کو تلاش کرنے کے لیے ایف آئی اے حکام کو درخواست دے دی۔ تفصیلات کے مطابق گلستان جوہر میں نوسرباز گروہ سرگرم ہوگیا ہے گروہ کے کارندوں نے چند روز میں 3 موبائل شاپ کے دکانداروں کو بھاری رقم کا چونا لگا دیا، واقعہ کی سی سی ٹی وی فوٹیج حاصل کرلی گئی ہے، متاثرہ دکانداروں نے بتایا کہ گروہ کے کارندوں نے انہیں آن لائن رقم منتقل کرنے کے بہانے لوٹا، گروہ کے کارندے موبائل شاپ پر آکر کہتے ہیں کہ انہیں آن لائن 50 ہزار روپے بھیجنے ہیں رقم بھیجنے کے لیے گروہ کا سرغنہ دکاندار سے موبائل فون اپنے ہاتھ میں لے لیتا ہے اپنے موبائل فون کا نمبر ڈالنے کے بجائے دکاندار کے اکاؤنٹ میں موجود رقم اپنے ہی اکاؤنٹ میں منتقل کر دی جس کے بعد گروہ کا سرغنہ کہتا ہے کہ اسے آج رقم نہیں بھجوانی اور گروہ کا سرغنہ واپس چلا جاتا ہے اور جب دکاندار اپنے موبائل فون اکاؤنٹ کا بیلنس چیک کرتا ہے تو اسے معلوم ہوتا ہے کہ موبائل فون کے اکاؤنٹ سے رقم منتقل کر لی گئی ہے، دکانداروں کا کہنا ہے کہ گروہ کے کارندے ملزم ممکنہ طور پر دیگر ساتھیوں کو لے کر دکان پر آتا ہے دیگر ساتھی دکاندار کو مصروف رکھتے ہیں اسی دوران گروہ کا سرغنہ واردات مکمل کر لیتا ہے۔ دکانداروں کاکہنا ہے کہ انہیں حیرت اس بات کی ہے کہ ہر دکان کا ایجنٹ کوڈ الگ ہوتا ہے لیکن نوسرباز گروہ بڑی آسانی سے رقم کسی دوسرے موبائل نمبر پر منتقل کرکے فوراً ہی اسے دوسرے موبائل فونز سے رقم نکلوا بھی لیتے ہیں دکانداروں کا کہنا ہے کہ رقم کسی گلناز نامی خاتون کے نمبر پر منتقل ہوتی ہے جبکہ جو قومی شناختی کارڈ نمبر انہیں دیا گیا وہ مورو ضلع نوشہروفیروز کے رہائشی واصف حسین کا ہے۔