سوشل میڈیا پر جعلی آئی ڈیز کی بلاکنگ کا عمل شروع

March 12, 2019 12:49 pm0 commentsViews: 22

ایف آئی اے سائبر کرائم اور پی ٹی اے حکام نے فیس بک اور ٹویٹر پر بھارت سے چلائی جانے والی 10 سے زائد جعلی آئی ڈیز کی تحقیقات شروع کردیں
کراچی، لاہور، اسلام آباد، ملتان و دیگر شہروں میں پاک بھارت کشیدگی کے دوران دونوں ممالک کے شہری ایک دوسرے کیخلاف ہوگئے تھے، ذرائع
کراچی (نیوز ڈیسک) ایف آئی اے سائبر کرائم سرکل اور پاکستان ٹیلی کمیونی کیشن اتھارٹی نے سوشل میڈیا پر سرکاری اداروں کے نام سے بنائی گئی جعلی آئی ڈیز کی تحقیقات شروع کردی۔ فیس بک اور ٹویٹر پر 10 ہزار سے زائد جعلی آئی ڈیز کو بھارت سے چلایا جارہا ہے۔ پی ٹی اے حکام جعلی آئی ڈیز کی نشاندہی پر انہیں بلاک کر رہے ہیں۔ ذرائع کے مطابق حالیہ پاک بھارت کشیدگی کے دوران دونوں ملکوں کے شہری بھی ایک دوسرے کے خلاف سوشل میڈیا پر صف آراء ہو گئے تھے۔ اس وقت سوشل میڈیا پر ہونے والی سرگرمیاں فوری طور پر رائے عامہ پر اثرانداز ہوتی ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ بھارت کی جانب سے 10 ہزار سے زائد جعلی آئی ڈیز کو پاک بھارت کشیدگی سے تین ماہ قبل سوشل میڈیا پر متحرک کیا گیا تھا۔ ذرائع نے سوشل میڈیا پر بھارتی پروپیگنڈے کے انسداد کے لیے بنائی گئی ٹیموں کے حوالے سے بتایا ہے کہ ایف آئی اے سائبر کرائم سرکل کے تحت ملک کے تمام بڑے شہروں کراچی، اسلام آباد، لاہور، ملتان، فیصل آباد، گوجرانوالہ، راولپنڈی، پشاور، کوئٹہ اور گلگت بلتستان میں ایف آئی اے سائبر کرائم سرکل اور این آر تھری سی کی ٹیمیں سوشل میڈیا پر بھارت اور افغانستان سمیت دیگر ممالک سے پروپیگنڈے کے لیے چلائی جانے والی آئی ڈیز کی بلاکنگ میں مصروف ہیں۔ ذرائع کے مطابق ان تمام ٹیموں سے ملنے والے لنکس کی ابتدائی چھان بین کے بعد ان کو پاکستان میں بلاک کرنے کے لیے پی ٹی اے میں موجود ٹیموں کو ارسال کر دیا جاتا ہے جہاں پر انہیں بلاک کرنے کی حتمی کارروائی کی جاتی ہے۔