الیکشن کمیشن کا فیصلہ ٗ متحدہ چھوڑنے پر ڈپٹی میئر ارشد وہرہ نااہل

March 14, 2019 11:27 am0 commentsViews: 5

نااہلی کی درخواست ایم کیو ایم پاکستان نے دائر کی تھی ٗ محفوظ فیصلہ گزشتہ روز سنا دیا گیا
ایم کیو ایم پاکستان کو ایک اور فتح نصیب ہوئی ہے ٗ میاں عتیق فیصلے کیخلاف پیل دائر کرینگے ٗ وکیل ارشد وہرہ
اسلام آباد (نیوز ایجنسیاں) الیکشن کمیشن آف پاکستان نے پارٹی بدلنے پر ڈپٹی میئر کراچی ارشد وہرہ کو نااہل قرار دے دیا۔ الیکشن کمیشن کی جانب سے ڈپٹی میئر کراچی ارشد وہرہ کی نااہلی سے متعلق کیس کا فیصلہ سنا دیا جس کے مطابق ڈپٹی میئر کراچی ارشد وہرہ نااہل قرار پائے ہیں۔ ارشد وہرہ کی نااہلی کی درخواست ایم کیو ایم پاکستان نے دائر کی تھی۔ ارشد وہرہ ضلع وسطی کراچی کی یونین کونسل 49 سے چیئرمین منتخب ہوئے تھے اور بعدازاں ان کو ڈپٹی میئر کراچی منتخب کیا گیا تھا۔ انہوں نے 2007ء میں متحدہ قومی موومنٹ چھوڑ کر پاک سرزمین پارٹی میں شمولیت اختیار کرلی تھی۔ ایم کیو ایم نے ڈپٹی میئر کا عہدہ نہ چھوڑنے پر اعتراض کرتے ہوئے الیکشن کمیشن میں ان کی نااہلی کی درخواست دائر کی تھی۔ تین رکنی بینچ نے گزشتہ سماعت پر فیصلہ محفوظ کر لیا تھا جو گزشتہ روز سنا دیا گیا۔ ارشد وہرہ کے وکیل سید حفیظ الدین نے الیکشن کمیشن کے باہر گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ الیکشن کمیشن اور عدالتوں کا احترام کرتے ہیں ارشد وہرہ کو منحرف ہونے پر نااہل کیا گیا۔ انہوں نے کہاکہ ارشد وہرہ نے متحدہ لندن کی غداری کے باعث پارٹی تبدیل کی تھی، فیصلے کے خلاف اپیل دائر کریں گے۔ ایم کیو ایم پاکستان کے سینیٹر میاں عتیق نے الیکشن کمیشن کے باہر گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ آج ایم کیو ایم پاکستان کو ایک اور فتح نصیب ہوئی یہ فتح حق و سچ کی ہے۔ انہوں نے کہاکہ الیکشن کمیشن نے اہم فیصلہ دیاہے اور ارشد وہرہ کو لوکل گورنمنٹ ایکٹ کے تحت پارٹی سے منحرف ہونے پر نااہل کیا ہے۔