دوا ساز مافیا طاقتور ہوگئی ٗ جان بچانے والی ادویات کے بحران کا خدشہ

April 15, 2019 12:28 pm0 commentsViews: 22

ادویات کی قیمتوں میں از خود اضافے پر کریک ڈائون کے باوجود حکومت قیمتیں کم کرانے میں ناکام ہوگئی
فارما سوٹیکل کمپنیاں بلیک میلنگ پر اتر آئیں ہیں ٗ وزیراعظم کے احکامات ہوا میں اڑا دئیے گئے
اسلام آباد (این این آئی) دواساز مافیا نے وزیراعظم اور وزیر صحت کے احکامات ہوا میں اڑا دیے، جان بچانے والی ادویات کے بحران کا خدشہ پیدا ہوگیا، دوا ساز کمپنیوں نے سپلائی روک دی۔ ادویات کی قیمتوں میں ازخود اضافہ پر کریک ڈائون کے باوجود حکومت قیمتیں کم کرانے میں ناکام ہوگئی۔ تفصیلات کے مطابق فارما سوٹیکل کمپنیوں نے حکومت کی جانب سے منظور کردہ 15 فیصد اضافے کے بجائے قیمتوں میں 40 سے 225 فیصد تک ازخود اضافہ کیا تھا جس پر وزیراعظم نے عوامی مطالبے پر 10 اپریل کو ادویات کی قیمتیں واپس لینے کے لیے 72 گھنٹے کا الٹی میٹم دیا تھا۔ حکومت کی طرف سے دی گئی ڈیڈ لائن ختم ہونے کے بعد وزیر صحت عامر کیانی نے ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی اور فارما سیوٹیکل ایسوسی ایشن سے مشاورت کے بعد 395 ادویات کی قیمتوں میں کمی کا نوٹیفکیشن جاری کیا تھا تاہم محکمہ صحت کا نوٹیفکیشن دوا ساز کمپنیوں پر بے اثر ثابت ہوا اور کریک ڈائون کے باوجود ادویات کی قیمتیں کم نہیں ہوئیں۔ ذرائع کے مطابق ادویات کی قیمتوں میں کمی کے اعلان کے بعد فارماسوٹیکل کمپنیاں بلیک میلنگ پر اتر آئی ہیں اور ادویات کی نئی قیمتوں والے اسٹاک کی سپلائی روک دی گئی ہے، سپلائی بحال نہ ہونے سے جان بچانے والی ادویات کے بحران کا خدشہ ہے۔