بانی متحدہ کی تقریر پر مہاجر نوجوان لاپتہ ہوجاتے تھے، مصطفی کمال

June 12, 2019 12:45 pm0 commentsViews: 8

مہاجروں نے صحیح اور غلط کی بنیاد پر خود کو متحدہ قائد سے علیحدہ کیا ہے، چیئرمین پی ایس پی
بانی متحدہ پہلے بھی کئی مرتبہ گرفتار ہوچکے لیکن اس بار فرق ہے، پاکستان ہائوس میں پریس کانفرنس
کراچی (اسٹاف رپورٹر) پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین سید مصطفی کمال نے کہا ہے کہ بانی متحدہ کو قدرت نے دکھا دیا کہ غلط کام کا انجام غلط ہے۔ ان کی ایک تقریر پر مہاجر لڑکے لاپتا اور گرفتار ہوتے تھے، سچ کہنے کی پاداش میں بانی متحدہ کے کہنے پر موجود ایم کیو ایم پاکستان کے نمائندے ہم پر علاقوں میں حملے کیا کرتے تھے۔ مہاجروں نے صحیح اور غلط کی بنیاد پر خود کو متحدہ قائد سے علیحدہ کیا ہے، ارباب اختیار سے گزارش ہے بانی متحدہ کو سامنے رکھ کر مہاجر قوم پر جاری مظالم کا خاتمہ کریں۔ ان کے ساتھ جاری ناروا سلوک، کوٹہ سسٹم، نوکریوں کا نہ ملنا، کراچی کو بجٹ نہ دینا، کچرا نہ اٹھانا، آبادی کو کم گننا، میئر اور بلدیاتی امیدواروں کو اختیارات نہ دینے جیسے مظالم کا خاتمہ ہونا چاہیے۔ مہاجروں کو بھی سوچنا ہوگا کہ ہم سے غلط راستہ اختیار ہوگیا ورنہ ہمیں سب چھوڑ کر علیحدہ ہونے کی ضرورت نہیں تھی۔ پاکستان ہائوس میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ میں اگلے الیکشن کا نہیں سوچ رہا بلکہ اگلی نسل کو مدنظر رکھتے ہوئے فیصلے کر رہا ہوں ایک الیکشن سے کوئی فرق نہیں پڑتا، ہم بانی متحدہ کے سب سے وفادار لوگ تھے، مہاجر خود صحیح اور غلط کا فرق کر کے بانی متحدہ سے علیحدہ ہوئے۔ بانی متحدہ پہلے بھی کئی مرتبہ گرفتار ہو چکے ہیں لیکن اس بار فرق ہے، ہو سکتا ہے وہ ضمانت پر باہر آجائیں لیکن قدرت نے انہیں دکھا دیا کہ غلط کام کا غلط انجام ہے۔