اپوزیشن میرے منہ سے این آر اوکے3الفاظ سننا چاہتی ہے،وزیراعظم

July 11, 2019 11:59 am0 commentsViews: 1

ن لیگ اور پیپلز پارٹی نے خود ایک دوسرے پر کیسز کیے اور کہا میں تمہیں کچھ نہیں کہوں گا تم مجھے کچھ نہیں کہو گے
یہ لوگ پہلے دن سے حکومت گرانے کی کوشش کر رہے ہیں، مجھے انہوںنے ایک دن بھی پارلیمنٹ میں بولنے نہیں دیا
میں جلد امریکہ ج اپوزیشن میرے منہ سے این آر اوکے3الفاظ سننا چاہتی ہے،وزیراعظم
ا رہا ہوں اور وہاں ہوٹل میں نہیں پاکستانی سفارتخانے میں ٹھہر یں گے‘ تاجروں کے وفد سے ملاقات
اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ اپوزیشن میرے منہ سے صرف تین الفاظ سننا چاہتی ہے۔ انہوں نے کہاہے کہ اپوزیشن چاہتی ہے کہ میں ’این آر او‘ کے تین لفظ بول دوں لیکن میں انہیں این آر او نہیں دوں گا۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ن لیگ اور پیپلز پارٹی نے خود ایک دوسرے پر کیسز کیے، انہوں نے کہا کہ دونوں جماعتوں کے رہنماؤں نے ایک دوسرے پر کیسز کر کے انہیں رکھ دیا اور کہا کہ میں تمہیں کچھ نہیں کہوں گا تم مجھے کچھ نہیں کہو گے۔وزیراعظم نے کہا کہ یہ لوگ پہلے دن سے حکومت گرانے کی کوشش کر رہے ہیں، انہوں نے مجھے ایک دن بھی پارلیمنٹ میں بولنے نہیں دیا اور یہ صرفاین آر او چاہتے ہیں جو انہیں نہیں ملے گا۔ خیال رہے کہ ویزراعظم تاجروں کے وفد سے ملاقات کے بعد صحافیوں سے بات چیت کر رہے تھے جہاں انہوں نے اپنے خیالات کا اظہار کیا۔وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ میں جلد امریکہ جا رہا ہوں اور میں وہاں جا کر ہوٹل میں نہیں ٹھہروں گا۔انہوں نے کہا ہے کہ وہ امریکہ میں موجود پاکستانی سفارتخانے میں ٹھہر یں گے۔ وزیراعظم عمران خان نے صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ میرا جینا مرنا پاکستان ہے، پاکستان میں سرمایہ کاری لانے کی کوشش کر رہے ہیں۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ سابق صدر آصف علی زرداری نے دبئی کے 40دورے کیے اور سابق وزیراعظم نواز شریف نے لندن کے 20دورے کیے، یہ لوگ وہاں کیا لینے جاتے تھے؟ انہوں نے کہا کہ نواز شریف اپنی کرپشن کی وجہ سے جیل میں ہے، لوگوں کا احتساب نہیں کریں گے اور انہیں نہیں پکڑیں گے تو یہ ملک آگے نہیں بڑھے گا۔انہیں سزا دینا ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ اللہ نے پاکستان کو بے پناہ وسائل سے نوازا ہے ، ہم پاکستان میں اصلاحات اور بہتر ٹیکس سسٹم لانے کی کوشش کر رہے ہیں۔ 21کروڑ آبادی ملک کر تھوڑا تھوڑا ٹیکس دے تو ملک ترقی کر سکتا ہے۔انہوں نے بتایا کہ جب تک ہم ٹیکس دینے کے رویے میں تبدیلی نہیں لائیں گے ملک آگے نہیں بڑھے گا۔