دولت مشترکہ ممالک کو سی پیک میں شراکت داری کی دعوت

July 11, 2019 12:18 pm0 commentsViews: 4

خطے میں امن و استحکام چاہتے ہیں، کرپشن خاتمے کیلئے دنیا ہماری حمایت کرے‘شاہ محمودقریشی
وزیر خارجہ کالندن میںخطاب، دولت مشترکہ کی 70ویں سالگرہ پر یادگاری ٹکٹ جاری کرنیکا اعلان
اسلام آباد ،لندن(مانیٹرنگ ڈیسک)وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہاہے پاکستان تجارت، سرمایہ کاری، تخلیق اور رابطے پر یقین رکھتا ہے ، ہماری پالیسیوں کا محورعوام ہیں اور ہم خطے میں امن و استحکام چاہتے ہیں، پاکستان میں دوسرے اسلامی ممالک کے مقابلے میں حقیقی جمہوریت ہے ، سی پیک روٹ کے ساتھ خصوصی اقتصادی زونز میں دولت مشترکہ کی شراکت داری کا خیرمقدم کریں گے ، پاکستان نے سیاسی اور فوجی کارروائیوں کے ذریعے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں بے مثال کامیابیاں حاصل کی اوردہشتگردی ،انتہا پسندی کی لہر کو شکست دینے کیلئے بیس نکات پر مبنی ‘قومی حکمت عملی’مرتب کی ہے ،ہم نے منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کی مالی معاونت کی پڑتال کیلئے ٹھوس اقدامات کئے ہیں،کرپشن کے خاتمے کیلئے عالمی برادری ہماری حمایت کرے ،لندن میں دولت مشترکہ کے وزرائے خارجہ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے شاہ محمودقریشی نے کہا کہ 2008 میں دولت مشترکہ کی رکنیت کی بحالی پر پاکستان نے مثبت اقدامات کیے ہیں، جولائی 2018 میں پاکستان میں تیسرے عام انتخابات کو یورپی یونین اور کامن ویلتھ کے مانیٹرز نے آزادانہ اور شفاف قرار دیا ، پارلیمنٹ، سول سروس اور دیگر شعبہ جات میں خواتین کی نمائندگی بڑھی ہے اقلیتوں کیلئے 5فیصد خصوصی کوٹہ مختص ہے ، پاکستان 2.7 ملین افغان مہاجرین کو پناہ دئیے ہوئے ہے ، ماحولیاتی تغیر کے خطرات کے پیش نظر پاکستان نے بلین ٹری شجرکاری منصوبہ کامیابی سے مکمل کیا، غربت کے خاتمے کیلئے ‘احساس’پروگرام اورضرورت مندوں کی صحت کیلئے صحت سہولت پروگرامشروع کیاگیا ،انہوں نے کہا کہ پاکستان دولت مشترکہ کی 70ویں سالگرہ کے سلسلے میں یادگاری ڈاک ٹکٹ جاری کر رہا ہے ،مزیدبرآں شاہ محمود قریشی نے پاکستانی ہائی کمیشن کی طرف سے لگائی گئی تصویری نمائش بھی دیکھی ،نمائش میں پاکستان کے وزیر اعظم لیاقت علی خان اور بیگم رعنا لیاقت علی کی کامن ویلتھ کے پہلے اجلاس میں شرکت کی تصاویر بھی شامل ہیں،وزیر خارجہ نے جاری ڈاک ٹکٹوں کا بھی معائنہ کیا۔ علاوہ ازیں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے ممبر ممالک کے وزرائے خارجہ سے غیر رسمی ملاقاتیں بھی کیں اور دو طرفہ امور پر تبادلہ خیال کیا۔