پولیس ایکٹ کا مخالف ہوں، اس سے کارکردگی متاثر ہوگی گورنر سندھ

July 16, 2019 11:59 am0 commentsViews: 6

کے فور منصوبے کے بغیر کراچی کو پانی کی فراہمی ممکن نہیں، وفاق نے اپنا حصہ ڈال دیا، اب سندھ حکومت ذمہ داری پوری کرے
کراچی کی حد تک تاجروں نے ہڑتال کو مسترد کردیا، عمران اسماعیل کی گورنر ہائوس میں صحافیوں سے بات چیت
کراچی (اسٹاف رپورٹر) گورنر سندھ عمران اسماعیل سے صحافیوں کے ایک وفد نے گورنر ہائوس میں ملاقات کی۔ ملاقات میں صحافیوں کے سوالات کاجواب دیتے ہوئے گورنر سندھ نے کہاکہ سندھ اسمبلی سے منظور ہونے والے پولیس ایکٹ کا اصولی مخالف ہوں، اس ایکٹ سے پولیس کی کارکردگی متاثر ہوگی۔ کے فور منصوبہ سے متعلق پوچھے گئے ایک اور سوال کا جواب دیتے ہوئے گورنر سندھ نے کہاکہ کے فور منصوبہ کے بغیر کراچی کو پانی کی فراہمی ممکن نہیں، وفاق نے اپنا حصہ ڈال دیا اب سندھ حکومت کو اپنی ذمہ داریاں پوری کرنی ہوں گی، ابتدائی طور پر 25 ارب کے منصوبے میں وفاق نے اپنے حصہ کے ساڑھے بارہ ارب لگا دیے، منصوبہ کو مکمل کرنے کے لیے وفاق ہر ممکن تعاون فراہم کرنے کو تیار ہے، گرین لائن پر سوال کا جواب دیتے ہوئے عمران اسماعیل نے کہاکہ گرین لائن کراچی کا پہلا ماس ٹرانزٹ منصوبہ ہے، منصوبہ میں RIS سسٹم اور بسیں سندھ حکومت نے فراہم کرنی تھیں مگر منصوبے کی رفتار دیکھتے ہوئے وزیراعظم نے دورہ کراچی میں اس منصوبہ کو 100 فیصد وفاق کی جانب سے مکمل کرنے کا اظہار کیا۔ تاجروں کی ہڑتال کے سوال کا جواب دیتے ہوئے کہاکہ کراچی کی حد تک تاجروں نے ہڑتال کو مسترد کیا تاجروں سے کیے گئے وعدوں کو پورا کریں گے۔ گھوٹکی میں ہونے والے ضمنی انتخابات کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں کہاکہ عوام کی حقیقی رائے کے حصول کے لیے گھوٹکی کے ضمنی انتخابات کو صاف و شفاف بنانا ہوگا۔