25 جولائی کا جلسہ سلیکٹڈ حکومت کیخلاف ریفرنڈم ہوگا پیپلز پارٹی

July 19, 2019 12:25 pm0 commentsViews: 21

اپوزیشن کے ملک گیر یوم سیاہ کے سلسلے میں سیاسی طاقت کے مظاہرے کیلئے مزار قائد کے سامنے جلسہ انتظامات کو حتمی شکل دیدی گئی، وزیر بلدیاتی سعید غنی
پیپلز سیکریٹریٹ کے سامنے اسٹیج کی جگہ کا تعین کرلیا گیا، مختلف اپوزیشن جماعتوں کے قائد ریلیوں اور جلوسوں کی قیادت کرتے ہوئے جلسہ گاہ پہنچ کر خطاب کریں گے، وقار مہدی
کراچی (اسٹاف رپورٹر) متحدہ اپوزیشن کے ملک گیر یوم سیاہ کے سلسلے میں 25 جولائی کو کراچی میں سیاسی طاقت کے مظاہرے کے لیے مزار قائد کے سامنے جلسہ کے انتظامات کو حتمی شکل دے دی گئی، مزار قائد کے برابر پیپلز سیکریٹریٹ کے سامنے اسٹیج کی جگہ کا تعین کر لیا گیا جلسہ میں شرکت کے لیے مختلف اپوزیشن جماعتوں کے قائدین ریلیوں اور جلوسوں کی قیادت کرتے ہوئے جلسہ گاہ پہنچ کر خطاب کریں گے۔ پیپلز پارٹی کے رہنمائوں سعید غنی، وقار مہدی کا کہنا ہے کہ 25 جولائی کا جلسہ سلیکٹڈ حکومت کے خلاف ریفرنڈم ہوگا، سندھ کے عوام سلیکٹڈ وزیراعظم اور حکومت کو مسترد کر دیں گے۔ اپوزیشن جماعتوں کے اتحاد میں شامل پیپلز پارٹی سندھ کے سیکرٹری جنرل وقار مہدی، پیپلز پارٹی کراچی کے صدر سعید غنی اور دیگر جماعتوں کے صوبائی رہنمائوں نے جمعرات کو مجوزہ جلسہ گاہ کا دورہ کیا اور جلسہ کی تیاریوں کے لیے آرگنائزنگ کمیٹی کے فیصلوں کو حتمی شکل دی۔ قبل ازیں اپوزیشن جماعتوں کی آرگنائزنگ کمیٹی کا اجلاس پیپلز سیکریٹریٹ میں منعقد ہوا جس میں جلسہ کی کامیابی کے لیے کراچی کے چھ اضلاع سے ریلیاں اور جلوس نکالنے کی حکمت عملی طے کی گئی۔ علاوہ ازیں اپوزیشن جماعتوں کے رہنمائوں نے پیپلز سیکریٹریٹ کے سامنے جلسہ گاہ کی تیاری اور اسٹیج کے مقام کا دورہ کیا اور جلسے کی تشہیری مہم کے لیے فیصلے کیے گئے۔ مزار قائد اعظم پر اپوزیشن جماعتوں کے ہونے والے جلسہ عام کے سلسلے میں قائم کی گئی آرگنائزنگ کمیٹی کے اجلاس میں پیپلز پارٹی کے سعید غنی اور وقار مہدی، مسلم لیگ (ن) کے علی اکبر گجر، سلمان خان، جمعیت علمائے اسلام (ف) کے مولانا عبدالکریم عابد اور مولانا غیاث، اے این پی کے یونس بونیری اور حنیف شاہ، نیشنل پارٹی کے رمضان میمن اور مجید ساجدی، جے یو پی کے حلیم غوری، اسلم عباسی، پختونخوا ملی عوامی پارٹی کے سکندر خان اور بشیر خان مندوخیل نے شرکت کی۔