کراچی میں قبروں کیلئے بھی جگہ نہیں ملے گی سندھ ہائی کورٹ

August 22, 2019 12:26 pm0 commentsViews: 4

یہاں معصوم بن کر آجاتے ہیں، ان کا بس چلے تو قبرستان بھی بیچ دیں، چیف جسٹس
گلستان جوہر میں واٹر بورڈکی زمین کی چائنا کٹنگ اور غیر قانونی فروخت کی انکوائری مکمل کرنے کی ہدایت
کراچی (اسٹاف رپورٹر) سندھ ہائی کورٹ نے گلستان جوہر میں واٹر بورڈ کی زمین کی چائنا کٹنگ اور غیر قانونی فروخت سے متعلق 4 ہفتوں میں انکوائری مکمل کرنے کی ہدایت کردی۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ وہ وقت دور نہیں جب اس شہر میں قبروں کے لیے جگہ نہیں ملے گی۔ چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ جسٹس احمد علی شیخ کی سربراہی میں جسٹس عمر سیال پرمشتمل دو رکنی بینچ کے روبرو گلستان جوہر میں واٹر بورڈ کی زمین کی چائنا کٹنگ اور غیر قانونی فروخت سے متعلق چنوں ماموں کے فرنٹ مین سمیت سرکاری افسران و دیگر کی ضمانت کی درخواست پر سماعت ہوئی۔ پراسیکیوٹر نیب نے موقف اختیار کیا کہ کے ایم سی نے سندھ حکومت کی زمین الاٹ کردی، چیف جسٹس نے ریمارکس دیے یہاں معصوم بن کر آجاتے ہیں ان کا بس چلے تو قبرستان بھی بیچ دیں۔ گولے گنڈے والے کے اکائونٹ سے کروڑوں روپے نکل رہے ہیں وہ وقت دور نہیں جب اس شہر میں قبروں کے لیے جگہ نہیں ملے گی۔ ملزمان کے وکلا نے موقف اختیار کیا کہ اس زمین کا دیوانی مقدمہ بھی زیرالتوا ہے، چیف جسٹس نے ریمارکس دیے ہر جگاڑی پلاٹ میں دیوانی مقدمہ ہے اس میں اسٹے بھی ہوتا ہے۔