مقبوضہ کشمیر گھروں میں اشیاء خورد و نوش کا ذخیرہ ختم

September 16, 2019 1:15 pm0 commentsViews: 4

کرفیو لگے 42 روز گزر گئے، لوگوں کو اپنے پیاروں کے جنازوں میں جانے کی اجازت بھی نہیں ہے
مقبوضہ وادی میں دو کشمیری نوجوانوں کو شہید کردیا گیا، بھارت کیخلاف روزانہ مظاہرے ہورے ہیں
سری نگر (خبرایجنسیاں) قابض بھارتی فورسز نے ریاستی دہشت گردی میں 3 کشمیری نوجوانوں کو شہید کر دیا۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق 2 نوجوانوں کو ضلع کٹھوعہ میں ایک جعلی مقابلے میں شہید کیا گیا جبکہ ایک کو دوران حراست بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنا کر شہید کیا گیا جس کی شناخت اخلاق احمد خان کے نام سے ہوئی۔ مقبوضہ وادی میں 42 ویں روز بھی کرفیو جاری رہا، وادی بھر میں سڑکیں سنسان جبکہ دکانیں اور کاروباری مراکز بند رہے۔ لوگوں کو پیاروں کے جنازوں میں جانے کی اجازت نہیں ہے، گھروں میں اشیا خورونوش کا ذخیرہ ختم ہو چکا ہے، دوائیں ناپید ہونے سے مریض تڑپ رہے ہیں، شہریوں کا کہنا ہے کہ گھر سے نکل نہیں سکتے، کئی روز بعد پیاروں کے مرنے کی اطلاع ملتی ہے۔ ادھر بھارت کی سیاسی جمات ویلفیئر پارٹی کی سینئر رہنما شیما حسن نے اپنے ساتھیوں کے ہمراہ ایک پریس کانفرنس میں انکشاف کیا کہ 5 اگست سے اب تک مقبوضہ وادی میں لگ بھگ 40 ہزار کشمیریوں کو گرفتار کیا جاچکا ہے، انہوں نے بتایا کہ ویلفیئر پارٹی کے دیگر رہنمائوں کے ہمراہ انہوں نے 12 اور 13 ستمبر کو مقبوضہ وادی کا دورہ کیا اور یہ تمام تفصیلات اکٹھی کیں۔ انہوں نے کہاکہ کشمیری عوام اس وقت شدید کرب میں مبتلا ہیں تمام تر بندشوں کے باوجود بھارتی فورسز کشمیریوں کا جذبہ آزادی نہ دبا سکیں، بھارت کے خلاف روزانہ مظاہرے ہو رہے ہیں۔