پرانے کی آڑ میں نئے اعلیٰ معیار کے کپڑوں کی اسمگلنگ ناکام

September 16, 2019 1:32 pm0 commentsViews: 10

درآمد کنندہ کمپنیوں کیخلاف مقدمہ درج، 5 ملزمان کو بھی نامزد کیا گیا ہے
کراچی (کامرس رپورٹر) ماڈل کسٹم کلکٹریٹ اپریزمنٹ ایسٹ کے شعبہ آر اینڈ ڈی نے پرانے کپڑوں کی آڑ میں مخمل سمیت اعلیٰ معیار کے کپڑے اور الیکٹرانک سامان کی اسمگلنگ کو ناکام بناتے ہوئے درآمد کنندگان الاسود انٹرپرائزز اور کلیئرنگ ایجنٹ علی اینڈ کمپنی کے ساتھ ہی شپنگ کمپنی میسرز میرین یونائیٹڈ ایجنسی کے خلاف مقدمہ درج کرلیا۔ نامزد ملزمان میں عمران ہارون، محمد ادریس، محمد علی، محمد احسن اور قیصر عباس شامل ہیں۔ گزشتہ دو ماہ کے دوران اسی نوعیت کا چوتھا مقدمہ درج کیا گیا ہے جن میں ملوث ملزمان نے کروڑوں کا ٹیکس چوری کرکے قومی خزانے کو بھاری نقصان پہنچایا ہے۔ ذرائع کے مطابق جولائی 2019ء میں سائوتھ ایشیا کنٹینرز ٹرمینل پر درآمد ہونے والا کنسائمنٹ دو ماہ سے کلیئر نہیں کروایا گیا تھا، اسی دوران کلکٹر اپریزمنٹ ایسٹ ڈاکٹر ندیم میمن کو خفیہ اطلاع ملی کہ لنڈا کی آڑ میں اعلیٰ معیار کے کپڑے کی اسمگلنگ کی جارہی ہے، ان کی ہدایت پر شعبہ آر اینڈ ڈی میں تعینات ڈپٹی کلکٹر رانا ارسلان مجید کی سربراہی میں پرنسپل اپریزر ابراہیم خان اور دیگر افسران پر مشتمل ایک ٹیم تشکل دی گئی جس نے جانچ پڑتال کی تو کنسائمنٹ سے 67 لاکھ 89 ہزار مالیت کی مختلف رنگوں کی ویلیویٹ سے بنی ہوئی جائے نماز اور دیگر اعلیٰ معیار کا کپڑا برآمد ہوا جس پر 47 لاکھ 89 ہزار مالیت کے ڈیوٹی و ٹیکسز کی چوری کی جارہی تھی۔