منشیات فروشی میں ملوث پولیس اہلکار وں کے چہروں بے نقاب

September 16, 2019 1:46 pm0 commentsViews: 5

گرفتار منشیات فروش ملزم رحمن گل نے بھاری رشوت وصول کرنیوالے اہلکاروں کے نام ظاہر کردئیے
ہر سپاہی کو 3ہزار روپے دیتا ہوں ٗ ملزم رحمن گل کی سوشل میڈیا پر ویڈیو وائرل ہوگئی
کراچی (کرائم رپورٹر) سرکاری ملازمت کی آڑ میں منشیات فروشوں کی پشت پناہی کرنے والے پولیس اہلکاروں کے چہرے بے نقاب ہوگئے، گرفتار منشیات فروش نے بھاری رشوت وصول کرنے والے اہلکاروں کے نام ظاہر کردیئے، ایس ایس پی ملیر نے ملزم کے ویڈیو بیان سامنے آنے کے بعد اہلکاروں کو معطل کرکے ان کے خلاف محکمہ جاتی کارروائی کی ہدایت کردی۔ سہراب گوٹھ پولیس کے ہاتھوں گرفتار منشیات فروش ملزم رحمان گل کی سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ویڈیو میں سنا جاسکتا ہے کہ منشیات فروش کی پشت پناہی کرنے والے بااثر افراکا تعلق محکمہ پولیس سے ہے، ملزم رحمان گل ویڈیو بیان میں کہہ رہا ہے کہ ہر سپاہی کو تین ہزار روپے دیتا ہوں، علاقے میں منشیات فروشی کا کاروبار کرتا ہوں اور میرے پاس پولیس والے آتے ہیں، ملزم نے بتایا کہ اہلکار شاہد اسلم، معراج، عاشق بلیدی، پی سی ممتاز، راجہ سرفراز و دیگرآتے ہیں اور ہر سپاہی بھاری رقم وصول کرتا ہے، واضح رہے کہ اینٹی نارکوٹکس فورس نے گزشتہ ماہ سرکاری ملازمت کی آڑ میں منشیات فروشی کرنے والے ایکسائز انسپکٹر اور کانسٹیبل کو رنگے ہاتھوں گرفتار کرکے قبضے سے ہیروئن اور اسلحہ برآمد کرکے ملزمان کیخلاف مقدمہ درج کیا تھا، کارروائی کے دوران گاڑی پر چھاپہ مارا تھا، گل شیرکی گاڑی سے دو کلوہیروئن اور 800گرام کوکین برآمد ہوئی تھی، اس حوالے سے اے این ایف حکام کا کہنا ہے کہ ملزم گل شیر ایکسائز میں انسپکٹر ہے، گرفتار ملزم گل شیر کی نشاندہی پر ایک اور کارروائی میں کاشف اور صمید نامی ملزمان کو گرفتار کیا گیا تھا، ملزمان کے قبضے سے چار کلو ہیروئن، ایم پی فائیو رائفل اور ایم سی جی برآمد ہوئی تھی، اے این ایف کے مطابق ملزم کاشف بھی ایکسائز میں کانسٹیبل ہے۔