چائنا کٹنگ پولیس کے 2 اہلکاروں سمیت 3 کارندے گرفتار

September 17, 2019 12:30 pm0 commentsViews: 6

گلستان جوہر میں اربوں روپے مالیت کی سرکاری اراضی پر پلاٹس بنا کر فروخت کررہے تھے، مقدمہ درج کرلیا گیا
گرفتار ملزمان میں تھانہ شارع فیصل کا چوکی انچارج عاصم صدیقی، ہیڈ کانسٹیبل حیدر زمان اور فتح ساند شامل ہے، پولیس ذرائع
کراچی (نیوز ڈیسک) شہر میں چائنا کٹنگ کے کالے دھندے میں پولیس اہلکار بھی ملوث نکلے، ملزمان گلستان جوہر بلاک 11 میں غیر قانونی ہنگو گوٹھ کے نام پر 40 ایکڑ قیمتی سرکاری اراضی کو پلاٹس کی کٹنگ کرکے فروخت کر رہے تھے۔ اراضی کی مالیت پونے 7 ارب روپے بتائی جاتی ہے۔ اینٹی کرپشن حکام نے لینڈ مافیا کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے 2 پولیس اہلکاروں سمیت لینڈ مافیا کے 3 کارندے گرفتار کرکے مقدمہ درج کر لیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق اینٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ ایسٹ زون نے گلستان جوہر بلاک 11 کامران چورنگی کے قریب 40 ایکڑ قیمتی سرکاری اراضی جس کی مالیت 6 ارب 70 کروڑ روپے سے زائد بتائی جاتی ہے کو جعلی کاغذات کے ذریعے فروخت کرنے والے لینڈ مافیا گینگ کے کارندوں کو گرفتار کر لیا۔ گرفتار شدگان میں تھانہ شارع فیصل کا چوکی انچارج عاصم صدیقی، ہیڈ کانسٹیبل حیدر زمان اور فتح ساند شامل ہیں۔ اینٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ نے مجاز حکام کی منظوری سے سرکاری اراضی پر قبضے میں ملوث لینڈ مافیا گروپ کے خلاف اینٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ کے انسپکٹر رتو خان جلبانی کی مدعیت میں مقدمہ الزام نمبر 66/2019 درج کرکے تین ملزمان کو گرفتار کرکے تفتیش کی جارہی ہے اور مقدمے میں ملوث دیگر ملزمان کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جارہے ہیں۔