جج ارشد ملک کیس میں نون لیگ کی امیدوں پر پانی پھر گیا

October 9, 2019 11:29 am0 commentsViews: 2

جج کیس میں دہشت گردی کی دفعات کے بعد شریف خاندان بڑی مشکل میں پھنسنے والا ہے
اگلے 24 گھنٹوں میں کون کونسی اہم شخصیات گرفتار ہونے والی ہیں؟ سینئیر صحافی کا اہم انکشاف
لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک ) معروف صحافی رانا عظیم کا کہنا ہے کہ جج ویڈیو سکینڈل کیس میں بہت سے لوگ خوشیاں منا رہے تھے کہ اس کیس کی بنیاد پر نواز شریف رہا ہو جائیں گے۔لیکن سارا معاملہ ہی الٹ گیا ہے۔جج ارشد ملک کیس میں ن لیگ کی امیدوں پر پانی پھر گیا ہے۔رانا عظیم نے کہا کہ اس کیس میں دہشت گردی کی کئی دفعات لگ گئی ہیں۔یہ دفعات اس لیے لگائی گئیں کہ اس میں تین اہم افراد کو گرفتار کیا گیا تھا ،جس میں ناصر جنجوعہ اور ان کے دو ساتھی شامل تھے جو جج ارشد ملک سے ملاقاتیں کرتے تھے،ان کو ایف آئی اے کی ایک ٹیم نے تفتیش کے بعد رہا کر دیا تھا،اس ٹیم کے بارے میں بھی پتہ کیا جا رہا ہے کہ آخر انہوں نے وہاں سے کون کون سے مفادات لیے اور بدلے میں رہا کیا۔اس حوالے سے اہم ترین ثبوت بھی مل گئے۔اس بندے کا بھہ پتہ چل گیا جس نے اصل میں جج کی ویڈیو بنائی جب کہ اس سے موبائل فون بھی برآمد کیا گیا اس کا فرانزک کیا گیا تو معلوم ہوا کہ موبائل سے وہ ویڈیو ڈیلیٹ کی جا چکی تھی۔اس کیس میں دو دفعات لگی ہیں اس کے بعد وہ ملزمان جنہیں رہا کیا گیا انہیں گرفتار کر لیا جائے گا،اس کیس میں دہشت گردی دفعات لگنے کے بعد کیس کی نوعیت بدل گئی ہے۔آنے والے دنوں میں شریف خاندان اس کیس کا کیسے مقابلہ کرتے ہیں یہ تو وقت ہی بتائے گا لیکن ایسے کیس میں تو ضمانت بھی نہیں ہوتی۔ رانا عظیم نے کہا اب یہ کیس صرف سائبر کرائم کا کیس نہیں رہے گا بلکہ اس پر دہشت گردی کی دفعات لگیں گی جس کے بعد اس کے شنکجے میں وہ لوگ بھی آئیں گے، جو ویڈیو بنانے اس کو سامنے لانے اور اس متعلق پراپیگنڈا کرنے میں شامل تھے۔اس کیس میں لاہور سے بھی ایک اہم گرفتاری کی جائے گی۔