عمران خان نے فضل الرحمان سے مذاکرات پریوٹرن لے لیا

October 15, 2019 12:14 pm0 commentsViews: 5

وزیرعظم نے مذاکرات کیلئے کمیٹی بنائی تھی، کمیٹی کی بدھ کو میٹنگ ہونی تھی‘سینئر تجزیہ کار
عمران نے اچانک اپنا فیصلہ بدل دیا کوئی بات نہیں کی جائے گی‘ نجی ٹی وی کے پروگرام میں تبصرہ
لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) سینئر تجزیہ کار عارف نظامی نے کہا ہے کہ عمران خان نے مولانا فضل الرحمان سے مذاکرات پریوٹرن لے لیا، وزیرعظم نے کمیٹی بنائی تھی ، کمیٹی کی بدھ کو میٹنگ ہونی تھی،وزیر اعلیٰ پنجاب، وزیراعلیٰ خیبرپختونخواہ ، وزیرداخلہ اعجاز شاہ کمیٹی میں شامل تھے، لیکن عمران خان نے اچانک اپنا فیصلہ بدل دیا کہ کوئی بات نہیں کی جائے گی۔انہوں نے نجی ٹی وی کے پروگرام میں تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اگر دیکھا جائے توعملی طور ایک شکل میں توگرینڈ الائنس بن گیا ہے، 1977میں جب پاکستان نیشنل الائنس بنا تھا، وہ یہ تھا کہ ذوالفقار بھٹو کو نکالنا ہے دھاندلی ہوئی ہے، لیکن یہ الگ بات بعد میں کچھ اور چیزیں سامنے آئیں۔ لیکن آج تمام جماعتیں یک نکات پر اکٹھی ہیں کہ عمران خان کو حکومت سے فارغ کرنا ہے۔یہ ایک منفی قسم کا ایجنڈا ہے جمہوری نظا م میں تو اس کی حمایت نہیں کی جاسکتی۔لیکن حالات ایسے پیدا ہوگئے ہیں کہ آپ نے اپوزیشن کو دیوار کے ساتھ لگایا ہوا ہے اور توقع کر رہے ہیں کہ یہ بات چیت بھی کریں۔پارلیمنٹ کو غیرمئوثر کردیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ میں ایک خبر دوں کہ پچھلے ہفتے یہ طے ہوا تھا اورعمران خان کو منایا گیا تھا کہ یہ خالی انتظامی حربوں سے آزادی مارچ کا مقابلہ نہیں ہوسکتا۔اس کیلئے مولانا فضل الرحمان سے گفت وشنید کا بھی طریقہ اپنایا جائے۔ سب سے پہلے وزیرمذہبی امور نورالحق قادری کا نام آیا، انہوں نے تردید کردی کہ مجھ سے رابطہ نہیں کیا گیا۔ پھر ایک کمیٹی بنائی گئی جس میں وزیر اعلیٰ پنجاب، وزیراعلیٰ خیبرپختونخواہ ، وزیرداخلہ اعجاز شاہ،اور کچھ دوسرے لوگ شامل تھے کمیٹی کی میٹنگ بدھ کے روز ہونی تھی۔لیکن خان صاحب نے اچانک اپنا فیصلہ بدل دیا کہ کوئی مذاکرات نہیں کیے جائیں گے۔