ایم سی بی کی شرح منافع میں 14 فیصد اضافہ

October 18, 2019 12:17 pm0 commentsViews: 1

چیئرمین میاں محمد منشا کی زیر صدارت بورڈ آف ڈائریکٹرز کا اجلاس، 4 روپے فی شیئر کے ساتھ سب سے نمایاں سہ ماہی پے آئوٹ قائم
کراچی(کامرس رپورٹر)ایم سی بی لمیٹڈنے پرائیویٹ بیکنگ سکیٹر میں نوماہ میں سب سے زیادہ منافع دیا ۔ اور اس صنعت میں چار روپے فی شیئر کے ساتھ سب سے نمایاں سہ ماہی پے آوٹ قائم ۔ایم سی بی کے بورڈ آف ڈائریکٹر کااجلاس میا ں محمد منشاء کی چیئرمین شپ میں منعقد ہوا جس کا مقصد بینک کی کارگردگی پر نظر ثانی ، 30ستمبر2019 کو ختم ہونے والی نو ماہ کی عارضی سٹیٹمنٹس کی تصدیق کرنا بورڈ آف ڈائریکٹر نے چار روپے فی شیئر کے تیسرے عبوری Dividend کا بھی اعلان کیا ہے ۔جوکہ اس سال 2019 کے اختتام تک چالیس فیصد سے 120 فیصد تک پہنچ جائے گا ۔ اور اسDividend کے پے آوٹ میں اضافے کارجحان جاری ہے۔ایم سی بی نے ٹیکس سے قبل 27.51 ارب روپے کا منافع ظاہر کیا ہے جوکہ گزشتہ عرصہ سے 18%زیادہ ہے اور فی حصہ قیمت میں 13.74%تک پہنچا ہے ۔(جوکہ2018 میں 12.08% تھا) ۔ بینک کے ٹیکس کے بعد منافع کی شرح میں 14%اضافہ کے ساتھ 16.29 ارب روپے کا اضافہ ہوا ۔باوجود یہ کہ 4%اضافی سپر ٹیکس کا بوجھ بھی ٹیکس سال 2018 بھی موجود تھا ۔ جو دوسرے سپلمنٹری ایکٹ2019 کے تحت نافذ العمل ہوا ۔ 30 ستمبر2019 کوختم ہونے والے نوماہ کے ٹیکس کی شرح 41% ہے جو کہ پچھلے عرصے سے 2% زیادہ ہے ۔ نیٹ انٹرسٹ انکم بڑھ کر 42.99 ارب روپے ہوگئی جو کہ پچھلے عرصے کے مقابلے میں 27%زیادہ ہے۔ اثاثہ جات کے منافع میں بڑھوتری کا حجم خاص طور پر انویسٹ منٹ میں بینک کواس قابل بنایا کہ وہ 39.52ارب روپے کے اضافی مارک اپ کا اعلان کرسکے جوپچھلے عرصے سے 67% زیاد ہ ہے ۔ بنک نے پچھلے چند سالوں میں انٹرسٹ ریٹ میں نمایاں اضافہ کے باوجود اپنی ترکی جاری رکھی ہے ۔باوجود یہ کہ ڈیپازٹس پر انٹرسٹ کی شرح میں منافع بخش اثاثہ جات کی قیمت کے مقابلہ میں نظر ثانی ہوئی ہے۔