حکومت کے ساتھ مذاکرات اور ملاقات دونوں منسوخ

October 21, 2019 11:27 am0 commentsViews: 4

سربراہ جے یو آئی ف نے مذاکرات کا اختیار متحدہ اپوزیشن کی قائم کردہ رہبر کمیٹی کو دے دیا
ہمیں مذاکراتی ٹیم میں شامل نہیں کیا گیااپوزیشن کا اعتراض‘ رہبر کمیٹی کا اجلاس کل طلب کر لیا
اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) جے یو آئی ایف نے آزادی مارچ پر حکومتی کمیٹی کے ساتھ مذاکرات موخر کر دئیے ہیں۔تفصیلات کے مطابق آج سب حکومتی کمیٹی اور جے یو آئی ایف کی مذاکرات کے لیے قائم کردہ کمیٹی کے مابین آزادی مارچ کے حوالے سے مذاکرات ہونے تھے۔بتایا گیا ہے کہ جے یو آئی ایف اور حکومتی وفد کے درمیان ہونے والی آج کی ملاقات منسوخ ہو گئی ہے۔جے یو آئی ایف نے مذاکرات کا فیصلہ رہبر کمیٹی پر چھوڑ دیا۔مولانا فضل الرحمن کی جانب سے فیصلہ کیا گیا ہے کہ متحدہ اپوزیشن کی جانب سے بنائی گئی رہبر کمیٹی ہی اس متعلق فیصلہ کرے گی۔اس حوالے سے رہبر کمیٹی کا اجلاس بھی 22اکتوبر کو طلب کر لیا گیا ہے۔اپوزیشن کی جانب سے بھی اعتراض کیا گیا تھا کہ ہمیں مذاکراتی ٹیم میں شامل نہیں کیا گیا۔حکومت سے مذاکرات کے حوالے سے ہمیں اعتماد میں نہیں لیا گیا جس کے بعد جے یو آئی ایف نے آزادی مارچ پر حکومتی کمیٹی کے ساتھ مذاکرات اور ملاقات دونوں مسوخ کر دئیے۔خیال رہے کہ۔حکومت اور جے یو آئی ایف کے درمیان مذاکرات کی آج پہلی نشست ہو نا تھی۔