شہریوں کو کتوں سے بچانے کیلئے ٹاسک فورس بنانے کا حکم

October 23, 2019 12:50 pm0 commentsViews: 9

مآوارہ کتے شہریوں کو کاٹ رہے ہیں مگر آپ لوگ کچھ نہیں کر رہے، عدالت نے سیکریٹری بلدیات کی سرزنش کردی
سندھ حکومت صوبے بھر کے اسپتالوں میں اینٹی ریبیز ویکسین فراہم کرے، سندھ ہائی کورٹ کی سیکریٹری صحت کو ہدایت
کراچی (اسٹاف رپورٹر) سندھ ہائی کورٹ نے آوارہ کتوں کے کاٹنے سے متعلق صوبائی حکومت، کے ایم سی اور ڈی ایم سیز کو ٹاسک فورس بنانے کا حکم دے دیا۔ منگل کو عدالت نے سندھ حکومت کو صوبے بھر کے اضلاع میں کتے کے کاٹنے کی ویکسینز کی فراہمی کا بھی حکم دے دیا۔ جسٹس محمد علی مظہر اور جسٹس آغا فیصل پر مشتمل دو رکنی بینچ کے روبرو آوارہ کتوں کے کاٹنے کی ویکسین کی عدم فراہمی سے متعلق طارق منصور ایڈووکیٹ کی درخواست پر سماعت ہوئی۔ عدالت نے سیکرٹری بلدیات سرزنش کرتے ہوئے استفسار کیا کہ آپ پچھلی تاریخ پر کیوں نہیں آئے؟ آپ مسئلہ حل کیوں نہیں کرتے؟ کتے لوگوں کو کاٹ رہے ہیں۔ سیکرٹری بلدیات روشن علی شیخ نے بتایا یہ ڈی ایم سیز کی ذمے داری ہے، حال ہی میں اضلاع کو2 ،2 کروڑ روپے گاڑیوں کے لیے دئیے گئے ہیں، ایسٹ کے علاوہ تمام اضلاع کو مختلف اماؤنٹ دیا گیا ہے۔ سیکرٹری بلدیات روشن علی شیخ نے بتایا کہ ایسٹ کی طرف سے ڈیمانڈ نہیں تھی اس لیے نہیں دئیے گئے۔ عدالت نے ریمارکس دئیے کہ کتے کاٹ رہے ہیں لوگوں کو مگر آپ لوگ کچھ نہیں کر رہے۔ عدالت نے سیکرٹری بلدیات اور سیکرٹری صحت کو ہدایت کی کہ ضلعی سطح ٹاسک فورس بنائیں اور گاڑیاں اس کام کے لیے مختص کریں۔ عدالت نے تنبیہ کی کہ جس کے علاقے میں واقعہ پیش آئے گا وہاں کا ڈپٹی کمشنر ذمے دار ہوگا۔ عدالت نے سندھ حکومت کو صوبے بھر کے اضلاع میں کتے کے کاٹنے کی ویکسینز کی فراہمی کا بھی حکم دیا۔