کشمیر سے توجہ ہٹانے کے لیے میری ویڈیوز وائرل کی گئیں‘ رابی پیرزادہ

November 6, 2019 1:48 pm0 commentsViews: 7

لندن ہیتھروسفر کے دوران ائیرپورٹ انتظامیہ نے بغیر کسی وجہ کے چار گھنٹے تک میری تلاشی لی
ایک گروہ نے ان کی ویڈیو کو وائرل کرنے کے لیے چھ مختلف ممالک میں پیسے دئیے گئے‘ گلوکارہ
لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک ) گلوکارہ رابی پیر زادہ کا کہنا ہے کہ کشمیر سے توجہ ہٹانے کے لیے میری ویڈیوز وائرل کی گئیں، لندن ہیتھرو سے سفر کر رہی تھی کہ وہاں موجود ائیرپورٹ ا نتظامیہ نے بغیر کسی وجہ کے چار گھنٹے تک میری تلاشی لی اور کہا کہ میرے پاس بارودی مواد ہے۔ تفصیلات کے مطابق گلوکارہ رابی پیرزادہ نے دعوی ٰکیا ہے کہ ان کے خلاف سوچی سمجھی سازش کی جارہی ہے کیونکہ انہوں نے بھارت کے زیر انتظام کشمیر میں جاری بھارتی فوج کی جارحیت کے خلاف آواز بلند کی تھی۔رابی پیرزادہ کہتی ہیں کہ ویڈیوز اور تصاویر وائرل ہونے کے بعد سب انہیں تنقید کا نشانہ بنا رہے ہیں مگر وہ اس حقیقت کو نظر انداز کر رہے ہیں کہ ان کے خلاف یہ مہم بہت پہلے اْس وقت شروع ہوئی جب ایک جھوٹی خبر پھیلی کی کہ فیڈرل بیورو آف ریوینیو نے مجھے نوٹس بھیجا۔رابی کا دعویٰ ہے کہ ایف بی آر نے انہیں کوئی نوٹس نہیں بھیجا تھا مگر یہ خبر سب نیوز چینلز پر چلی۔رابی پیرزادہ نے دعویٰ کیا ہے کہ انھیں انہیں فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی سے معلوم ہوا کہ اس سب کے پیچھے طاقت ور لوگوں کا گروہ ہے۔ کوئی بھی چیز اس طرح وائرل نہیں ہوتی، وہ اسے وائرل کرنے کے لیے پیسے دے رہے ہیں۔ رابی پیرزادہ کے مطابق یہ سب ان کیخلاف سوچی سمجھی سازش ہے۔ رابی مزید کہتی ہیں کہ سازش کرنے والوں کو جب اندازہ ہوگیا کہ وہ ان کے خلاف کامیاب نہیں ہو سکے تو انہوں نے تصاویر اور ویڈیوز وائرل کرنے کی غلیظ حرکت کی۔ سازشی گروہ نے کسی طرح ان کا موبائل ڈیٹا ہیک کیا؟ یہ میں نہیں جانتی۔ گلوکارہ رابی پرزادہ نے دعویٰ کیا ہے کہ ان کی ویڈیو کو وائرل کرنے کے لیے چھ مختلف ممالک میں پیسے دئیے گئے، جن میں سے صرف دبئی میں انہوں نے 13 ہزار درہم دئیے۔