سندھ کے شہروں کو صوبے کا درجہ دینا وقت کی ضرورت

November 9, 2019 12:48 pm0 commentsViews: 3

اربن سندھ ڈیموکریٹک کانفرنس کے اجلاس سے اخلاق ہاشمی، محفوظ النبی، حلیم غوری و دیگر کا خطاب
کراچی (پ ر) اربن سندھ ڈیمو کریٹک کانفرنس کی منتظمہ کمیٹی نے جمعیت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمن کی جانب سے ملک میں نئے عمرانی معاہدے کے مطالبے کو خوش آئند قرار دیا ہے۔ مجلس منتظمہ کے اجلاس کی صدارت اخلاق ہاشمی نے کی، قومی اسمبلی کے اسپیکر اسدقیصر کی جانب سے ملک کو درپیش موجودہ مسائل پرغور کرنے کے لیے اعلیٰ سطحی قومی کانفرنس کے انعقاد کی تجویز کو بھی اہم قرار دیا ہے۔ اجلاس میں محمد حلیم خان غوری، محفوظ النبی خان، عاطف حسین، قاری محمد ادریس خان اور انور جمال انصاری نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا۔ کانفرنس کی مجلس منتظمہ نے اس رائے کا بھی اظہار کیا کہ نئے معاہدہ عمرانی سے پاکستان کے موجودہ آئین میں ترامیم کا راستہ کھل جائے گا اور قومی زندگی کے مختلف مراحل کے حل کے لیے جو آئینی خلا اور ابہام موجود ہے اس کو بھی پُر کیا جاسکے گا۔ سندھ کے شہری علاقوں کو صوبہ کا درجہ دینا وقت کی اہم ضرورت ہے جبکہ ملک میں صوبوں کی تشکیل سے متعلق ناقابل عمل طریقہ کار کو تبدیل کرکے انتظامی اکائیوں کے طورپر صوبوں کی تشکیل کی راہ ہموار ہو جائے گی جو نہ صرف قومی یکجہتی کے لیے ضروری ہے بلکہ مختلف صوبوں کی حدود میں علاقوں کی مقامی آبادی کے لیے بھی اطمینان کا باعث ہوگا۔ صوبہ سندھ کے شہری علاقوں کو ایک انتظامی اکائی کے طور پر صوبے کا درجہ دینا وقت کی اہم ضرورت ہے۔