کراچی میں آویزاں بل بورڈز 24 گھنٹوں میں ہٹانے کا حکم

November 14, 2019 1:46 pm0 commentsViews: 1

کمشنر کراچی نے نوٹس لیتے ہوئے بلدیاتی اور متعلقہ اداروں کا اجلاس طلب کیا تھا
شہر میں بل بورڈز کی تنصیب سپریم کورٹ کے احکامات کی خلاف ورزی ہے، افتخار شالوانی
کراچی (اسٹاف رپورٹر) کمشنر کراچی افتخار شالوانی نے شہر کے مختلف علاقوں میں بل بورڈز آویزاں کرنے کا نوٹس لے لیا، بدھ کو انہوں نے اپنے دفتر میں ضلعی انتظامیہ اور بلدیاتی اداروں کے متعلقہ افسران کو کمشنر آفس میں طلب کیا اور ہدایت دی کہ وہ فوری کارروائی کرکے تمام بل بورڈز کو ہٹائیں، فیصلہ کیا گیا کہ تمام بل بورڈز 24 گھنٹوں میں ہٹا دیے جائیں گے۔ تمام ڈپٹی کمشنرز اور متعلقہ اداروں کے افسران مربوط کارروائی کریں گے، کمشنر کراچی افتخار شالوانی کی زیر صدارت اجلاس میں صورتحال کا تفصیلی جائزہ لیا گیا، ضلعی انتظامیہ کے افسران نے اجلاس کو اپنے اپنے ضلع میں بل بورڈز کی تنصیب کے بارے میں کمشنر کراچی کو بریفنگ دی۔ کمشنر کو بتایا گیا کہ تمام بل بورڈز بغیر اجازت لگائے گئے ہیں، کمشنر نے کہاکہ شہر میں بل بورڈز کی تنصیب سپریم کورٹ کے احکامات کی خلاف ورزی ہے، تمام ڈپٹی کمشنرز اور متعلقہ ادارے فوری کارروائی کریں اور کارروائی کرکے اپنی رپورٹ پیش کریں اجلاس میں بتایا گیا کہ زیادہ تر بل بورڈز اضلاع جنوبی، شرقی اور وسطی میں لگائے گئے ہیں۔ دیگر علاقوں میں بھی بلا اجازت بل بورڈز لگائے گئے ہیں۔ اجلاس میں ایڈیشنل کمشنر کراچی ون اسد علی خان، تمام اضلاع کے ایڈیشنل کمشنرز اور ضلعی بلدیات کراچی کے افسران اور دیگر بھی موجود تھے۔