…آرمی چیف کا ضبط جواب دے گیاوزیراعظم سے تحفظات کا اظہار …

November 28, 2019 2:50 pm0 commentsViews: 8

وزیراعظم کا غلطیاں کرنیوالوں کیخلاف سخت ایکشن کا فیصلہ
سپریم کورٹ کے نوٹس لینے کے بعد بھی آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کی سمری میں غلطیاں کیسے کی گئیں
سمری اور نوٹیفیکیشن میںغفلت کے مرتکب افسران اور ذمے داران کیخلاف کاروائی عمل میں لائی جائے گی
اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک ) آرمی چیف کا ضبط جواب دے گیا، وزیراعظم سے اپنے تحفظات کا اظہار کر دیا، پی ایم ہاؤس میں ہونے والے اجلاس میں جنرل قمر جاوید باجوہ نے مدت ملازمت میں توسیع کے نوٹیفیکیشن اور سمری میں فرق پر کھل کر تحفظات کا اظہار کیا۔وزیراعظم نے آرمی چیف کی مدت ملازمت کے معاملے کو متنازعہ بنانے والے تمام ذمے داران کیخلاف سخت ایکشن لینے کا فیصلہ کر لیا، پی ایم ہاوس میں ہونے والے اجلاس کے دوران عمران خان نے سمری میں بار بار غلطیاں کرنے پر شدید برہمی کا اظہار کیا، عدالتی فیصلے کے فوری بعد غفلت کے مرتکب افسران کیخلاف کاروائی کی جائے گی۔تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی چینل کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ وزیراعظم کی زیر صدارت وزیراعظم ہاوس میں ہونے والے اہم ترین اور ہنگامی اجلاس میں وزیراعظم نے آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کی سمری میں بار بار غلطیاں کیے جانے پر شدید برہمی کا اظہار کیا ہے۔ وزیراعظم نے سوال کیا کہ سپریم کورٹ کے نوٹس لینے کے بعد بھی آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کی سمری میں غلطیاں کیسے کی گئیں۔وزیراعظم نے واضح کیا کہ اس معاملے کے حوالے سے سپریم کورٹ کی جانب سے فیصلہ کیے جانے کے بعد غفلت کے مرتکب تمام افسران اور ذمے داران کیخلاف کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔ جبکہ اجلاس کے دوران آرمی چیف نے بھی اپنے تحفظات کا اظہار کیا۔ آرمی چیف جنرل قمر باجوہ نے اپنی مدت ملازمت کی توسیع کیلئے تیار کی گئی سمری اور نوٹیفیکیشن میں موجود فرق کے حوالے سے تحفظات کا اظہار کیا۔