عوام سوچ لے ان کو جان پیاری ہے یا پیسے‘وزیر اعظم

December 2, 2019 1:53 pm0 commentsViews: 2

سموگ انسانوں کیلئے بہت بڑا خطرہ ہے اس سے بچاؤ کے لیے ہمیں مہنگا تیل درآمد کرنا ہو گا
شہر میں چلنے والی بسوں اور گاڑیوں کو الیکٹرک یا گیس پر لائینگے‘ عمران کا تقریب سے خطاب
لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک)وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ عوام سوچ لے کہ ان کوجان پیاری ہے یا پیسے پیارے ہیں، سموگ سے بچاؤ کے لیے ہمیں مہنگا تیل درآمد کرنا ہو گا۔ ان کا کہنا ہے کہ حکومت نے سموگ کو ختم کرنے کی پالیسی تیار کر لی ہے اور آلودگی سے بچاوؤ اور شہریوں کی صحت کے تحفظ کے لیے آئندہ یورو ٹو کی بجائے یور فور ایندھن درآمد کیا جائیگا۔ کارانڈسٹری سے بات چیت چل رہی ہے، شہر میں چلنے والی بسوں اور گاڑیوں کو الیکٹرک یا گیس پر لائینگے۔لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ کہ یورو فور آئل تھوڑا مہنگا ہوگا لیکن شہری یہ سوچیں کہ انہیں پیسے پیارے ہیں یا اپنے بچوں کی جان پیاری ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ’سب سے زیادہ آلودگی گاڑیوں کے دھوئیں سے ہوتی ہے، ہم 50 سے 60 فیصد تیل درآمد کرتے ہیں۔ ابھی ہم یورو ٹو تیل درآمد کر رہے ہیں، اب ہم یورو فور درآمد کریں گے۔اس سے 90 فیصد فضائی آلودگی میں کمی آئیگی۔ان کا کہنا تھا کہ ’ابھی ہم یورو 2 آئل سے یورو فور پر جا رہے ہیں جبکہ 2020 کے اختتام تک ہم یورو فائیو پر منتقل ہو جائیں گے۔ آئل ریفائنریز، ٹریفک اور بھٹوں کو نئی ٹیکنالوجی پر منتقل کیا جائے گا اور لاہور میں 60 ہزار کنال اراضی پر جنگلات لگائے جائیں گے۔‘وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ تیسرا فیصلہ الیکٹرک وہیکل کے متعلق کیا گیا ہے۔انھوں نے کہا ہیکہ ’تین برس میں خود کو اپ گریڈ نہ کرنے والے تیل کے کارخانے بند کردیے جائینگے۔‘ان کامزید کہنا تھا کہ جو چاول کی فصل جلائی جاتی ہے اس کے لیے ہم ان کے ساتھ مل کر مشینری لے کر آئیں گے، فصل کو جلانے کی بجائے فروخت سے فائدہ اٹھایا جا سکتا ہے۔ وہ ہفتہ کی شام ایوان وزیر اعلی لاہور میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے۔