کراچی کی سیاست میں ڈرامائی تبدیلیوں کے آثار عامر لیاقت کے اپنی پرانی جماعت سے رابطے

December 10, 2019 12:17 pm0 commentsViews: 14

تحریک انصاف کے ٹکٹ پر قومی اسمبلی کا الیکشن جیتنے والے عامر لیاقت ایم کیو ایم کے مرکز بہادر آباد پہنچ گئے، مردم شماری کے معاملے پر ساتھ دینے کا اعلان کردیا
سندھ حکومت کیخلاف کوئی سازش نہیں ہورہی، صوبے میں گورنر راج کی خبریں قیاس آرائیاں ہیں، عمران اسماعیل کی جتوئی ہائوس سکھر میں میڈیا سے گفتگو
کراچی (نمائندہ خصوصی) کراچی کی سیاست میں جلد ڈرامائی تبدیلیوں کے آثار نمایاں ہونے لگے ہیں، پی ٹی آئی کے ٹکٹ پر قومی اسمبلی کا الیکشن جیتنے والے ڈاکٹر عامر لیاقت نے ایک بار پھر اپنی پرانی سیاسی جماعت ایم کیو ایم سے رابطے شروع کر دیے ہیں جبکہ دوسری طرف گورنر عمران اسماعیل نے صوبے میں گورنر راج لگنے کی تردید کی ہے۔ تفصیلات کے مطابق تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی عامر لیاقت حسین ایم کیوایم پاکستان کے بہادر آباد آفس پہنچ گئے اور مرکزی رہنمائوں سے ملاقات کی، عامر لیاقت حسین ایم کیو ایم کی قیادت کی جانب سے کی جانے والی اس پریس کانفرنس کے عین بعد پہنچے جس میں ایم کیو ایم نے کراچی میں مردم شماری کے نتائج پر اپنے شدید تحفظات پیش کرتے ہوئے اسے کراچی اور مخصوص آبادی کے خلاف سازش قرار دے دیا۔ عامر لیاقت حسین کی ایم کیو ایم قیادت سے ملاقات نصف گھنٹہ تک جاری رہی جس کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے عامر لیاقت حسین نے کہا کہ ایم کیو ایم میرا گھر ہے، مردم شماری کے معاملے پر میری آواز ایم کیو ایم کے ساتھ ہے، حلقہ بندیاں درست نہیں ہوئیں، غلط حلقہ بندیاں کرکے مہاجروں کی آبادی کو کم دکھایا گیا، کراچی کے مسائل پر ترقیاتی پیکیج کے بارے میں بھی وزیراعظم سے ملاقات میں بات کی۔ دوسری طرف گورنر سندھ عمران اسماعیل نے صوبے میں گورنر راج کے نفاذ کی باتوں کی تردید کرتے ہوئے اسے قیاس آرائیاں قرار دیا ہے اور کہاکہ وزیراعظم ہائوس میں سندھ حکومت کے خلاف کوئی سازش نہیں ہورہی ہے اور نہ حکومت کا کوئی ایسا پروگرام ہے۔ ایڈونچر کرنے کا اور نہ ہی میری کبھی سندھ میں گورنر راج کے حوالے سے صدر یا وزیراعظم سے بات ہوئی۔ تاہم اگر کسی نے وزیراعظم بننے کے لیے شیروانی تیار کرائی ہے تو اس کی یہ حسرت دل میں ہی رہ جائے گی، شیروانی تیار کرانے کی باتیں لطیفہ ہیں، ان ہائوس تبدیلی کی باتیں کرنے والے خواب خرگوش کے مزے لیں۔ سندھ میں پیپلز پارٹی کے اندر کوئی فارورڈ بلاک بن رہا ہے تو وہ پیپلز پارٹی جانے، باقی کسی فارورڈ بلاک کا ہم سے کوئی رابطہ نہیں، ہم مریم نواز کو کسی طور باہر نہیں جانے دیں گے۔ وہ جتوئی ہائوس سکھر میں میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے۔