دعا منگی اغوا کیس کے فارنزک افسر کی موبائل پر فائرنگ موٹر سائیکل سوار ملزمان فرار

December 10, 2019 12:17 pm0 commentsViews: 7

حملہ دھمکی آمیز تھا، ملزمان جانتے تھے موبائل خالی ہے، مذکورہ فارنزک ڈپارٹمنٹ کی موبائل انسپکٹر فرہاج بخاری کے زیر استعمال ہے، گولیوں کے خول فارنزک کیلئے بھیجے جائیںگے، پولیس حکام
مذکورہ افسر نے اپنے گھر آنے پر موبائل سپر ہائی وے سہارا اپارٹمنٹ کے نیچے کھڑی کی تھی، ملزمان نے 4 گولیاں فائر کیں، کسی قسم کا کوئی جانی نقصان نہیں ہوا، ایس پی گلشن
کراچی (کرائم ڈیسک) سچل تھانے کی حدود میں سپرہائی وے سہارا اپارٹمنٹ کے نیچے شہر کے سب سے ہائی پروفائل کیس دعا منگی اغوا کیس کے فارنزک افسر کی کھڑی موبائل پر نامعلوم موٹر سائیکل سوار ملزمان فائرنگ کر کے فرار ہو گئے۔ مذکورہ فارنزک ڈپارٹمنٹ کی موبائل انسپکٹر فرہاج بخاری کے زیر استعمال ہے، حملہ دھمکی آمیز تھا ملزمان جانتے تھے موبائل خالی ہے، گولیوں کے خول فارنزک کے لیے بھیجے جائیں گے۔ تفصیلات کے مطابق سچل تھانے کی حدود میں سپر ہائی سہارا اپارٹنمنٹ کے نیچے کھڑی پولیس موبائل پر فائرنگ کے واقعہ میں ملزمان نے کھڑی موبائل پر چار گولیاں چلائیں اور موقع سے فرار ہوگئے۔ ایس پی گلشن کے مطابق ملزمان کی جانب سے سچل تھانے کی حدود میں واقع سہارا اپارٹمنٹ کے نیچے کھڑی پولیس کی فارنزک ڈپارٹمنٹ کی موبائل پر نامعلوم ملزمان کی جانب سے چار گولیاں فائر کی گئیں جس میں کسی قسم کا کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ مذکورہ فائرنزک ڈپارٹمنٹ کی موبائل انسپکٹر فرہاج بخاری کے زیر استعمال ہے جو انہوں نے اپنے گھر آنے پر اپارٹمنٹ کے نیچے کھڑی کی تھی۔ پولیس ذرائع کے مطابق حملہ دھمکی آمیز تھا کیونکہ ملزمان جانتے تھے کہ موبائل خالی ہے۔ ذرائع کے مطابق مذکورہ فارنزک افسر شہر کے سب سے ہائی پروفائل کیس دعا منگی اغوا کی فارنزک کر رہا تھا۔ دوسری جانب واقعہ کی اطلاع ملتے ہی پولیس کی بھاری نفری جائے وقوعہ پر پہنچ گئی اور جائے وقوعہ سے گولیوں کے خول اکٹھے کیے، پولیس کے مطابق گولیوں کے خول فارنزک کے لیے بھیجے جائیں گے تاکہ پتا چل سکے کہ حملے میں استعمال ہونے والا اسلحہ اس سے قبل کسی واردات میں استعمال ہوا ہے یا نہیں۔