گیس بحران ٗ صنعتکاراورٹرانسپورٹرز آج احتجاج کرینگے

January 13, 2020 1:18 pm0 commentsViews: 7

صنعتی یونٹس بند ہوگئے ہیں ٗ شہر میں پبلک ٹرانسپورٹ غائب ہے ٗ صنعت کار اور ٹرانسپورٹرز کے صبر کا پیمانہ لبریز
کراچی (نیوز ڈیسک) کراچی میں گیس بحران انتہائی سنگین صورتحال اختیار کر گیا ہے۔ گیس قلت نے صنعتکاروں و ٹرانسپورٹرز کے صبر کا پیمانہ لبریز کر دیا ہے۔ صنعتکاروں نے آج سوئی سدرن گیس کمپنی کے دفتر پر احتجاج کا اعلان کیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق کراچی میں گیس بحران کی شدید قلت تھمنے کا نام نہیں لے رہی، گیس کی عدم دستیابی کے باعث شہر کے متعدد صنعتی یونٹس بند ہوگئے ہیں، گیس بحران کے باعث سائٹ، فیڈرل بی ایریا اور سائٹ سپرہائی وے کے صنعتی علاقوں میں پیداواری سرگرمیاں شدید متاثر ہیں، گیس کی قلت کے سبب متعدد صنعتی یونٹس یا تو بند ہو گئے ہیں یا پھر ان صنعتی یونٹس میں پیداوار گھٹ گئی ہے۔ گیس کے شدید بحران پر شہر کی تمام صنعتی انجمنوں نے آج پیر کو سوئی سدرن گیس کمپنی کے دفتر کے سامنے احتجاج کا اعلان کیا ہے۔ احتجاجی مظاہرے میں سائٹ، کورنگی، فیڈرل بی ایریا، نارتھ کراچی، بن قاسم اور سائٹ سپرہائی وے کی صنعتی انجمنوں کے نمائندے شریک ہوں گے۔ صنعت کاروں نے گیس بحران پر شدید تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے مہنگی ایل این جی خریدنے سے صاف انکار کر دیا ہے۔ صنعتکاروں نے الزام عائد کیا کہ گیس بحران جان بوجھ کر پیدا کیا گیا تاکہ سندھ میں ایل این جی کی فراہمی کا جواز پیدا کیا جاسکے۔ سی این جی اسٹیشنز کی مسلسل چار روز بندش نے شہر سے پبلک ٹرانسپورٹ غائب کردی ہے جس کے باعث عوام سڑکوں پر رُل کر رہ گئے ہیں۔