سرکاری اراضی پر قبضے: ‘ نیب نے سردار محمد بخش مہر کیخلاف شکنجہ تیارکرلیا

February 14, 2020 12:12 pm0 commentsViews: 5

سابق صوبائی وزیر سردار محمد بخش مہر کیخلاف سرکاری اراضی پر قبضے کی تحقیقات تیز
کئی ماہ سے بند انکوائری ایک مرتبہ پھر کھل گئی، ڈپٹی کمشنر گھوٹکی سے ریکارڈ طلب
کراچی (اسٹاف رپورٹر) پاکستان پیپلز پارٹی کے ایک اور طاقتور حلقے کے گرد گھیرا تنگ کرنے کے لیے نیب کا شکنجہ تیار سابق صوبائی وزیر کھیل سردار محمد بخش مہر کیخلاف دو ہزار سے زائد ایکڑ سرکاری اراضی پر قبضے کی تحقیقات تیزکر دی گئی، ڈپٹی کمشنر گھوٹکی سے ریکارڈ طلب کر لیا گیا۔گزشتہ کئی ماہ سے بند انکوائری ایک مرتبہ پھر کھل گئی، مہر خاندان میں اندرونی خانہ جنگی کے باعث احمد علی مہر کو وعدہ معاف گواہ بنائے جانے کا امکان، بلاول بھٹو زرداری کی لا تعداد کوششوں کے باجود بھی خاندان میں جاری اختلافات حل نہ ہو سکے۔ نثار کھوڑو بھی ثالثی کا کردار ادا کرنے میں ناکام ہو گئے۔ ذرائع کے مطابق نیب کی جانب سے 6اکتوبر 2019کو سردار محمد بخش کیخلاف تحقیقات کا آغاز کیا گیا تھا، اس سلسلے میں نیب سکھر کی جانب سے ڈپٹی کمشنر گھوٹکی سے مہر خاندان کی تمام تر زمینوں کا ریکارڈ بھی طلب کیا گیا تھا، جسے کئی ماہ تک فراہم کرنے سے گریز کیا جاتا رہا۔ بعد ازاں تمام تر انکوائری سرد خانے کی نذ ر کر دی گئی تھی، جس کے تحت گزشتہ کئی روز سے تحقیقاتی عمل سست روی کا شکار تھا، تاہم رواں ماہ نیب سکھر ڈویژن کو گھوٹکی میں سرکاری اراضی پر با اثر شخصیات کے قبضوں کی لا تعدادشکایات موصول ہونے اور رکن قومی اسمبلی کے تمام تر محرکات کے پیچھے ملوث ہونے پر مہر خاندان کیخلاف ایک مرتبہ پھر بند انکوائری کو منطقی انجام تک پہنچانے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے، جس کے تحت نیب کی جانب سے ڈپٹی کمشنر سے رابطے کویقینی بناتے ہوئے سردار محمد بخش مہر کے اثاثوں کی تفصیلات دوبارہ طلب کی گئیں ہیں۔ آ ئندہ چند روز میں انہیں نیب کی جانب سے با قا عدہ طور پر طلب کیا جا ئے گا، بعد ازاں حکم پر عملدر آ مد نہ ہونے کی صورت میں انہیں با قا عدہ طور پر گرفتار بھی کیا جائے گا۔