اسپین میں گھروں سے لاشیں برآمد ہونے لگیں

March 25, 2020 12:05 pm0 commentsViews: 9

ملٹری ایمرجنسی یونٹ کے کارکن جراثیم کش اسپرے کیلئے کیئر ہومز میں داخل
اولڈ ایج ہومزمیں درجنوں لاشیں موجود تھیں، ملک میں تشویش کی لہر دوڑ گئی
میڈرڈ (مانیٹرنگ ڈیسک) اسپین میں گھروں سے لاشیں برآمد ہونے لگی ہیں۔ اس وقت سپین میں کورونا وائرس نے دوسدرے ممالک کی طرح تباہی پھیلا رکھی ہے اب تک سپین میں کورونا وائرس سے 2300 اموات ہوچکی ہیں جبکہ طبی عملہ کے 4 ہزار ارکان سمیت 35 ہزار افراد وائرس سے متاثر ہو چکے ہیں۔ اور اب گھروں سے بھی لاشیں برآمد ہونے لگی ہیں۔ تفصیلات کے مطابق اسپین کے ملٹری ایمرجنسی یونٹ کے کارکن جراثیم کش اسپرے کرنے کیلئے کیئر ہومز میں داخل ہوئے تو اندر پہلے سے درجنوں لاشیں موجود تھیں جس کے بعد ملک میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق چین سے پھیلنے والی کرونا وائرس کی عالمی وبا نے 196 ممالک کو اپنا شکار بنایا ہے جہاں اب تک 3 لاکھ 83 ہزار افراد بیمار ہوچکے ہیں، انہیں متاثرہ ممالک میں اسپین بھی شامل ہ جہاں فوج دستے وائرس کی روک تھام کیلئے میدان میں خدمات انجام دے رہے ہیں۔اسپین کے ملٹری ایمرجنسی یونٹ نے وائرس کا پھیلاؤ روکنے کیلئے جراثیم کش اسپرے کیئر ہومز میں کرنے کیلئے داخل ہوئے تو اندر پہلے سے درجنوں لاشیں موجود تھیں۔اسپین جہاں 35 ہزار 212 افراد متاثر اور 2316 افراد ہلاک ہوچکے ہیں، وہاں ایک ہی گھر سے اتنی لاشیں ملنا تشویش ناک ہے اسی لیے سیکیورٹی اداروں نے تحقیقات شروع کردی ہے تاکہ یہ معلوم ہوسکے کہ یہ 21 افراد کرونا وائرس میں مبتلا ہوکر مرے ہیں یا پھر یہ ہلاکتیں کسی واردات کا نتیجہ ہیں۔ ہسپانوی میڈیا رپورٹس کے مطابق گزشتہ ہفتے بھی ایک اولڈ ایج ہوم سے 17لاشیں برآمد ہوئی تھیں، مذکورہ افراد کرونا وائرس میں مبتلا ہونے کے باعث ہلاک ہوئے تھے۔ ہسپانوی سیاست دانوں نے اعتراف کیا ہے کہ ان کے اولڈ ایج ہومز میں ہلاکت خیز وبا کرونا وائرس کے 20 فیصد کیس رپورٹ ہوئے ہیں۔