وزیر ٹرانسپورٹ کا سندھ میں کرفیو لگانے کا مطالبہ

March 26, 2020 11:30 am0 commentsViews: 2

وزیر اعلیٰ سندھ مزید سخت ایکشن لے کر صوبے میں کرفیو نافذ کریں، اویس قادرشاہ
صوبے میں ذخیرہ اندوزی کرنے والوں کیخلاف سخت کارروائی کی جائے گی‘ویڈیوپیغام
کراچی(اسٹاف رپورٹر)سندھ کے وزیر ٹرانسپورٹ سید اویس قادر شاہ نے صوبے میں لاک ڈاؤن کی خلاف ورزیوں پر وزیراعلیٰ سندھ کو سخت ایکشن کرنے اور کرفیو لگانے کی تجویز پیش کی ہے۔ویڈیوپیغام میں کہاکہ سندھ حکومت لوگوں کو کرونا وائرس سے بچانا چاہتی ہے اور اس لیے اس نے لاک ڈاؤن کا یہ اقدام اٹھایا ہے مگر اس کے باوجود اسکی خلاف ورزی کی شکایات آرہی ہیں اور یہاں تک کہ دیہات میں اجتماعات منعقد کیے جارہے ہیں میں اس لیے وزیر اعلیٰ سندھ سے گذارش کروں گا اور تجویز کروں گا کہ جتنے سخت اقدامات کرنا ہے کریں اگر کرفیو لگانا پڑتا ہے تو لگادیں کیونکہ لوگوں کی صحت کا مسئلہ ہے میں ان سے کہوں گا وہ کرفیو نافذ کرنے کے حوالے سے سوچیں اور اس پر عمل کریں۔ اگر عوام گھروں میں نہ بیٹھے تو ایک ماہ تک کرفیو لگانے پر غور کرسکتے ہیں۔اویس شاہ نے کہا کہ صوبے میں ذخیرہ اندوزی کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی اس لیے حکومت نے ٹول فری نمبرز جاری کردیئے ہیں عوام ذخیرہ اندوزی اور منافع خوری کے حوالے سے اس پرشکایت کرسکتے ہیں انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت نے یومیہ اجرت پر کام کرنے والے مزدوروں کے حوالے سے عملی کام شروع کردیا ہے جلد یہ کام ہر ضلع تک پھیل جائے گا۔دوسری جانب شہر قائد میں بدھ کو لاک ڈائون کا تیسرا روز ہے اور شہریوں کو گھروں میں روکنے کیلئے پولیس کی جانب سے اقدامات کیے جارہے ہیں، پبلک ٹرانسپورٹ بند ہے اور سڑک پر چلنے والے رکشہ ڈرائیوروں کے خلاف کارروائی کی جارہی ہے۔پولیس کے مطابق 4 سے5 افراد بیٹھا کر ڈرائیور رکشہ سٹرکوں پرلے آتے ہیں، ہم ایسے رکشے بند کرکے ڈرائیوروں کو سڑک کنارے بٹھاکر سزا دے رہے ہیں، تاہم کسی رکشہ ڈرائیور پر کوئی چالان نہیں کیا گیا ہے۔