بے نظیر قتل کیس میں مجھے اور فوج کو بدنام کیا جا رہا ہے، پرویز مشرف

November 2, 2015 3:20 pm0 commentsViews: 14

میری فطرت میں نہیں کہ کسی عورت کو دھمکی دوں، بے نظیر بھٹو کو بہت سمجھایا تھا اور سیکورٹی بھی فراہم کی تھی
مارک سیگل نے پیسے لیکر جھوٹ بولا، میرے دور حکومت کے اقدامات کو مخالفین غلط رنگ دے رہے ہیں، سابق صدر
اسلام آباد( نیوز ڈیسک) آل پاکستان مسلم لیگ کے چیئر مین جنرل ( ر) پرویز مشرف نے کہا ہے کہ انہوں نے جو کچھ بھی کیا پاکستان کے مفاد میں کیا مگر مخالفین کی طرف سے ان کے اقدامات کو غلط رنگ دیا گیا بے نظیر بھٹو قتل کیس میں مجھے اور فوج کو بد نام کیا جا رہا ہے۔ جس پر انہیں دکھ ہے۔ وزیر اعظم نواز شریف کے دورہ امریکا کے نتیجے میں قوم کو کوئی فائدہ حاصل نہیں ہوا، بے نظیر کو بتایا تھا کہ ان کے پاکستان آنے پر لا اینڈ آرڈر کی صورتحال خراب ہوگی مگر وہ نہ مانیں، انہیں بہترین سیکورٹی فراہم کرنے والے افراد مبارک باد کے مستحق ہیں اقوام متحدہ کو چاہئے کہ وہ شیو سینا اور آر ایس ایس کو دہشت گرد تنظیمیں قرار دیدے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے اتوار کو ایک نجی ٹی وی چینل کو انٹر ویو کے دوران کیا۔ انہوں نے کہا کہ عوام آج بھی ان کے دور کی خوشحالی کو یاد کرتے ہیں۔ بھارت کے ساتھ برابری کی سطح پر بات کریں۔ بے نظیر قتل کیس کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ مارک سیگل پیسے لے کر مجھے اور فوج کو بد نام کر رہا ہے میری فطرت نہیں ہے کہ کسی عورت کو دھمکی دوں۔ بینظیر کو ہر طرح سے سمجھایا تھا کہ یہاں ان کی جان کو خطرہ ہے۔ بے نظیر کو بہترین سیکورٹی فراہم کی تھی بی بی اگر سر گاڑی سے باہر نہ نکالتیں تو سانحہ نہ ہوتا۔

Tags: