کالعدم مذہبی جماعت کے دہشتگرد نثار چاچا نے51قتل کروائے‘جے آئی ٹی میں انکشاف

July 16, 2016 2:19 pm0 commentsViews: 16

کسی بڑے رہنما کو قتل کروانے پر سی این جی رکشہ دلوانے کا لالچ دیا گیا تھا‘ملزم
کراچی( کرائم رپورٹر) فرقہ وارانہ اور ٹارگٹ کلنگ میں ملوث کالعدم مذہبی جماعت سے تعلق رکھنے والے خطرناک ملزم سید اسرار عرف نثار عرف رحمن عرف چاچا کی جے آئی ٹی میں اہم انکشافات‘ ملزم نے دوران تفتیش بتایا ہے کہ روزگار نہ ہونے کے باعث جرائم کی دنیا میں قدم رکھا اور رکشہ لینے کی لالچ میں مولانا اورنگزیب فاروقی سمیت54 افراد کی ریکی کی ہے جس میں ذرائع کے مطابق 51 مخالفین کو قتل کروایا ہے‘ سی ٹی ڈی ذرائع نے مزید بتایا ہے کہ اسرار عرف چاچا2004 ء میں کراچی کی ایک فیکٹری میں ملازمت کرتا تھا جس کے بعد اس نے ٹارگٹ کلنگ کی خطرناک ٹیم میں شمولیت اختیار کرلی اور ملزم شہر کے مختلف علاقوں میں مخالف کالعدم مذہبی جماعت کے رہنماؤں اور سرگرم کارکنان کی ریکی کرکے اس وقت 51 افراد کو موت کے گھاٹ اتروا چکا ہے‘ سی ٹی ڈی ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ ملزم ماہوار تنخواہ پر ریکی کرتا تھا جبکہ کسی بڑے رہنما کو قتل کروانے پر اس کو سی این جی رکشہ دلوانے کی لالچ دی گئی تھی اور ٹارگٹ کلنگ ٹیم کے سربراہ حامد عرف بھائی نے مولانا اورنگزیب فاروقی کی ریکی کرنے کیلئے ان کے نام کا کوڈ ’’ آنٹی‘‘ رکھا تھا‘ اور ذرائع نے بتایا کہ مولانا اورنگزیب فاروقی کی ریکی کیلئے دو ماہ تک ان کے گھر کے قریب پیاز کا ٹھیلہ لگایا تھا۔