کراچی میں تھانوں کی تعداد کم ہونا شروع ہوگئی

November 6, 2019 2:08 pm0 commentsViews: 20

شہر میں تھانوں کی تعداد کو کم کرنے کے فیصلے پر عملدرآمد کے لیے اقدامات کا آغاز کر دیا گیا، اس ضمن میں ایس ایس پی ملیر کا آفس گڈاپ سٹی تھانے سے متصل عمارت میں منتقل کرنے کی ہدایت جاری کر دی گئی جبکہ کراچی کے تین اضلاع میں تھانوں کو ضم کرنے کی سفارش کردی گئی ہے۔ اس سلسلے میں ذرائع کا کہنا ہے کہ ڈسٹرکٹ ایسٹ میں پی آئی بی تھانہ کو جمشید کوارٹرز میں، عزیز بھٹی تھانے کو نیوٹائون تھانے میں ضم کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔ اسی طرح بریگیڈ تھانے کو سولجر بازار، مبینہ ٹائون کو سچل جبکہ ٹیپو سلطان تھانہ اور بلوچ کالونی تھانہ محمود آباد میں اور سائٹ سپرہائی وے انڈسٹریل ایریا، سہراب گوٹھ میں ضم کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔ ڈسٹرکٹ کورنگی میں تھانہ الفلاح کو تھانہ شاہ فیصل کالونی میں ضم کیا جائے گا۔ ڈسٹرکٹ ملیر میں شرافی گوٹھ تھانے کو قائدآباد تھانے میں ضم کرنے کی سفارش کی گئی۔ تھانوں کے ساتھ ساتھ ایس ایس پی ملیر کے آفس کو بھی گڈاپ سٹی تھانے کے ساتھ ملحقہ عمارت میں منتقل کر دیا گیا۔ تھانوں کی تعداد کم کرنا کس طرح جرائم کی تعداد کم کرنے میں سودمند ہوگا اس کا جواب تو آئی جی سندھ ہی دے سکتے ہیں، عوام تو صرف یہ چاہتے ہیں کہ شہر سے اسٹریٹ کرائمز سمیت دیگر جرائم کا خاتمہ ہو اور وہ سکون کے ساتھ زندگی گزار سکیں۔