زہریلی گیس سے ہلاکتیں ، ذمہ داروں کا تعین ضروری ہے

February 19, 2020 1:42 pm0 commentsViews: 47

کراچی کے علاقے کیماڑی میں زہریلی گیس پھیلنے سے اب تک ہلاکتوں کی تعداد 14ہوگئی ہے اور یہ معمہ بھی حل ہونے کے قریب ہی پہنچ گیا ہے کہ گیس کس طرح پھیلی اور ہلاکتیں کیسے ہوئیں کراچی گنجان آباد ہونے کے ساتھ ساتھ صنعتی و تجارتی لحاظ سے جنوبی ایشیاء سمیت دنیا بھر میں انتہائی اہمیت کا حامل ہے تو اس حوالے سے انتظام و انصرام کی اہمیت بھی دو چند ہو جاتی ہے جس میں کسی مصلحت اور معمولی سی کوتاہی کی بھی کوئی گنجائش نہیں رہتی کیونکہ ذرا سی غفلت کی صورت میں پانی سر سے گزر جانے والا معاملہ ہو جاتا ہے۔ ایسی صورت حال میں قانون نافذ کرنے والے اداروں سمیت تمام محکموں کی ذمہ داری ہوتی ہے کہ وہ آنکھیں کھلی رکھیں اور کسی بھی خرابی کی ’’بو‘‘ محسوس ہونے پر فوری حرکت میں آئیں اور معاملے کی تہہ تک پہنچتے ہوئے مکمل تدارک یقینی بنائیں۔ جیکسن تھانہ میں مقدمہ بھی درج کرلیا گیا۔ ایئر کوالٹی چیکنگ کے حوالے سے پاک فوج بھی بھرپور مدد کر رہی ہے لیکن حفاظتی اقدامات کو یقینی بنانا بہر صورت ناگزیر ہے تاکہ مزید کسی جانی نقصان سے بچا جاسکے اور ذمہ داران کا تعین بھی ضروری ہے۔زہریلی گیس کے اخراج کے سلسلے میں ہر قسم کی مصلحتوں کو بالائے طاق رکھ کر اصل اسباب تلاش کئے جائیں اور حقائق کو منظر عام پر لایا جائے تاکہ حادثہ کو سانحہ بننے سے روکا جاسکے۔