کراچی : اسٹریٹ کرائم روکنے کیلئے اسکیٹنگ فورس متعارف

December 24, 2020 2:53 pm0 commentsViews: 17

کراچی: پولیس نے اسٹریٹ کرائم روکنے کے لیے انوکھی فورس متعارف کرانے کا فیصلہ کرلیا جب کہ 20 رکنی اسکیٹنگ فورس کی تربیت آخری مرحلے میں پہنچ گئی۔ نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق سندھ پولیس نے دنیا کے کئی ممالک کی طرز پر اسکیٹنگ فورس کو میدان میں اتارنے کا فیصلہ کرلیا، اس مقصد کے لیے 10 خواتین سمیت 20 رکنی دستے کی ایک ماہ سے تربیت بھی جاری ہے، انھیں ٹریفک میں گاڑیوں کے درمیان اور رش والی جگہوں پر تیزی سے حرکت کرنے کی مشق دی جارہی ہے۔

تفصیلات کے مطابق ڈی آئی جی ایس ایس یو مقصود میمن نے ایکسپریس سے بات چیت کرتے ہوئے بتایا کہ ان اہلکاروں کو اسکیٹنگ شوز میں حرکت کے دوران فائرنگ کرنے کا بھی ماہر بنایا جارہا ہے تاکہ کاروباری مراکز اور خصوصا ٹریفک جام کے دوران شہریوں کو لوٹنے والے ڈاکوؤں کو پکڑنے میں آسانی ہوسکے خاص طور پر ایسی جگہوں پر جہاں پولیس موبائل اور موٹر سائیکلیں حرکت نہ کرسکے، یہ ماڈل دنیا کے کئی ممالک کو دیکھتے ہوئے بنایا گیا، توقع ہے کہ اب رش والی جگہوں پر لٹیروں کو آسانی سے پکڑا جاسکے گا، پولیس اہلکاروں کو شاپنگ سینٹر میں بھی تعینات کیا جائیگا تربیت لینے والوں میں لیڈی پولیس اہلکار بھی شامل ہیں۔

ڈی آئی جی ایس ایس یو مقصود میمن نے ایکسپریس سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ شہر میں ٹریفک کا اہم مسئلہ ہے ،اسٹریٹ کرمنل ٹریفک جام کا فائدہ اٹھاتے ہوئے شہریوں سے لوٹ مار کرکے فرار ہوجاتے ہیں ،اس دوران پولیس اہلکار جائے وقوعہ پر ٹریفک جام میں پھنس جاتے ہیں، ملزمان لوٹ مار کرکے فرار ہوجاتے ہیں ،ملزمان کو پکڑنے کے لیے خواتین اہلکاروں سمیت 20 جوانوں کو اسکیٹنگ کی تربیت دی جارہی ہے، تربیت ایک مہینے سے جارہی ہے ،پہلے مرحلے میں انھیں مخصوص مقامات پر تعینات کیا جائیگا، ان کے ساتھ ڈسٹرکٹ پولیس اہلکار بھی موجود ہوںگے تھانوں سے موبائل وین میں اسپاٹ تک چھوڑا جائے گا۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ اسکیٹنگ پولیس اہلکار شہر میں ٹوٹی پوٹی سڑکوں پر کیسے اسکیٹنگ کریں گے شہر میں موٹر سائیکل سوار شہری بڑی مشکل سے سفر کرتے ہیں اسکیٹنگ فورس پولیس اہلکار اسلحہ سنبھالیں گے یا اپنے آپ کو، موٹر سائیکل سوار پولیس اہلکاروں سے شہر میں کتنے بے گناہ شہری غلط نشانے کے باعث جاں سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں، اسکیٹنگ کرنے والے اہلکاروں سے ایک گولی کی جگہ پورا میگزین خالی ہوجائیگا اور کتنے ہی بے گناہ شہری زخمی ہوجائیں گے۔