پر امن طریقے سے جو احتجاج کرنا چاہتا ہے اسے نہیں روکیں گے ، مراد علی شاہ

April 19, 2021 2:42 pm0 commentsViews: 4

اسلام آباد: وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ حکومت نے مذہبی جماعت کے ساتھ معاہدہ کر کے غلط کیا۔ نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق اسلام آباد میں عدالت پیشی کے موقع پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے مراد علی شاہ نے کہا کہ ہم سب کے دلوں میں رسول اکرم ﷺکی عزت اور جذبات ہیں، ناموس رسالت ﷺ پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوسکتا، کل لاہور میں جو کچھ ہوا اس کے رد عمل میں ملک بھر میں پہیہ جام ہڑتال کا اعلان کیا گیا، ہم نے سندھ میں مذہبی جماعتوں سے رابطے بھی کیے ہیں، ہمارے کسی بھی عمل سے دوسروں کو مشکلات نہیں ہونی چاہیئں، سندھ حکومت نے کہا ہے کہ کوئی شخص اپنی مرضی سے دکان بند کرنا چاہتا ہے تو اسے نہیں روکا جائے گا، پرامن طریقے سے جو احتجاج کرنا چاہتا ہے اسے نہیں روکیں گے۔ اگر امن و امان کی صورتحال پیدا ہوئی تو حفاظتی اقدامات کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق مراد علی شاہ نے کہا کہ حکومت نے مذہبی جماعت کے ساتھ معاہدہ کر کے غلط کیا، حکومت اب بھی صورتحال پر وقتی قابو پانے کے لیے ان سے معاہدہ کر لے گی اور غلط کرے گی، وقتی فائدہ لینے کے لیے ایسی کوئی چیز نہ کریں جو ممکن نہ ہو اور اس کا بعد میں اس کا نقصان ہو،اس معاملے پر بھی صوبوں کو اعتماد میں لیا جائے۔

وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی والے کیسز کا سامنا کر رہے ہیں، ڈیل کی بات درست نہیں، خورشید شاہ ایک عرصہ سے جیل میں ہیں، ایک کامیاب منصوبہ جو کراچی کے لوگوں کو بجلی فراہم کر رہا ہے اس پر ریفرنس بنایا گیا، 68 والیمز پر مشتمل ریکارڈ عدالت میں لایا گیا ہے، 17،17ملزمان بنائے ہوئے ہیں تو کیس لمبا چلتا ہے، اتنے کا تو پاور پلانٹ نہیں تھا، جو منصوبہ بنایا تھا وہ ابھی بھی چل رہا ہے، منصوبے سے کراچی کے لیے 100 میگا واٹ بجلی پیدا ہورہی ہے، نیب کی انکوائری کی وجہ سے ہمیں پیسے نہیں مل رہے۔

کورونا کی صورت حال پر مراد علی شاہ نے کہا کہ این سی او سی کی گزشتہ میٹنگ میں انہوں نے کراچی سے شرکت کی تھی، ٹرانسپورٹ بند کرنے کی ان کی تجویز نہیں مانی گئی تھی، ٹرانسپورٹ2 دن کے لیے بند کرتے تو بیماری کا پھیلاؤ رک جاتا،صوبائی محکمہ صحت نے بتایا ہے کہ سندھ میں کورونا کیسز پھیل رہے ہیں، لگتا ہے وفاق ایکشن نہیں لے گا اور ہمیں ہی اس وبا سے نکالنے کا راستہ نکالنا ہو گا۔