عید کے تیسرے روز شہر میں بدترین ٹریفک جام‘ عوام سراپا احتجاج

July 21, 2015 4:23 pm0 commentsViews: 112

تفریحی مقامات پر جانے والے لوگ بچوں سمیت گاڑیوں میں پھنس کر رہ گئے‘ ٹریفک پولیس اہلکار ڈیوٹی سے غائب
الادین پارک‘ سفاری پارک‘ گارڈن میں چڑیا گھر کے اطراف شہریوں کو ٹریفک جام کا سامنا کرنا پڑا
کراچی(اسٹاف رپورٹر) انتظامیہ کی ناقص منصوبہ بندی اور ٹریفک پولیس کی غفلت کے باعث عید کے تیسرے روز شہر کے کئی علاقوں میں بد ترین ٹریفک جام ہوا‘ جس کے نتیجے میں لاکھوں شہری کئی گھنٹوں تک سڑکوں پر پھنسے رہے‘ عید کے تیسرے روز بڑی تعداد میں لوگ تفریحی مقامات کی جانب اور اپنے عزیز و اقارب سے ملنے کیلئے نکلے‘ ٹریفک جام کا سلسلہ دوپہر کے بعد شروع ہوا جو کہ شام کے بعد سنگین شکل اختیار کرگیا‘ اس دوران ٹریفک پولیس کے اہلکار شہریوں کی مدد کرنے اور ٹریفک بحال کرنے کے اقدامات کرنے کے بجائے کئی مقامات پر ڈیوٹیوں سے ہی غائب ہوگئے‘ تفصیلات کے مطاق عید کے تیسرے روز شہر کے مختلف علاقوں میں بد ترین ٹریفک جام میں شہریوں کو کئی گھنٹوں تک شدید پریشانی میں مبلا کئے رکھا‘ صدر ‘شارع فیصل‘ راشد منہاس روڈ‘ کورنگی‘ ملیر‘ قائد آباد‘ لانڈھی‘ انڈسٹریل ایریا‘ سفاری پارک سمیت کئی علاقوں میں گاڑیاں طویل قطاروں کی شکل میں کئی گھنٹوں تک سڑکوں پر پھنسی رہیں اور رینگ رینگ کر آگے بڑھتی رہیں جس کے باعث شہریوں نے منٹوں کا سفر گھنٹوں میں طے کیا‘ اس حوالے سے ٹریفک پولیس کے ذرائع سے معلوم ہوا کہ عید کے تیسر پہلے دونوں کے مقابلے میں کئی گنا زیادہ شہری گھروں سے باہر نکلے‘ جن کی بڑی تعداد نے تفریحی مقامات کا رخ کیا‘ جن میں سی ویو‘ دو دریا‘ گلشن اقبال میں قائم الہ دین پارک‘ سفاری پاک‘ چڑیا گھر سمیت دیگر تفریحی مقامات شامل تھے‘ جبکہ کافی بڑی تعداد اپنے عزیز و اقارب سے عیدملنے نکلی تھی‘ جس کا نتیجہ یہ نکلا کہ گلشن اقبال میں راشد منہاس روڈ‘ شارع فیصل پر ڈرگ روڈ‘ کار ساز‘ ڈالمیا‘ اسٹیڈیم روڈ‘ سفاری پارک‘ یونیورسٹی روڈ‘ طارق روڈ‘ نمائش‘ ایم اے جناح روڈ‘ نرسری‘ صدر کی ذیلی سڑکوں پر پارک سے کئی گنا زیادہ گاڑیاں لگنے سے سڑکوں پر ٹریفک جام ہوگیا۔

Tags: