ایم کیو ایم میں سیاسی ٹوٹ پھوٹ 3 دھڑے بننے کا امکان

July 22, 2015 3:49 pm0 commentsViews: 26

ایک گروپ الطاف حسین دوسرا پرویز مشرف کا ساتھ دے گا تیسرا دھڑا حقیقی کے ساتھ مل کر جدوجہد کرے گا
ایم کیو ایم اپنی تاریخ کے مشکل ترین دور سے گزر رہی ہے‘ جرائم میں ملوث کارکن پابند سلاسل ہوں گے‘ ذرائع
اسلام آباد( نیوز ڈیسک) متحدہ قومی موومنٹ میں سیاسی ٹوٹ پھوٹ شروع ہوچکی ہے۔ ‘3 واضح دھڑے بننے کا امکان ہے۔ ایک گروپ الطاف حسین کا ساتھ دے گا‘ دوسرا گروپ سابق صدر پرویز مشرف کے ساتھ شامل ہوجائیگا‘ جبکہ تیسرا گروپ ایم کیو ایم حقیقی سے مل کر نئی جدوجہد کا آغا ز کریگا۔ ذرائع نے بتایا کہ ایم کیو ایم اپنی تاریخ کے مشکل دور سے گزررہی ہے اور اندرونی طور پر اس میں سیاسی ٹوٹ پھوٹ شروع ہوچکی ہے اور 3 واضح دھڑے بننے کا امکان ہے جس کی وجہ سے ایم کیو ایم کے قائد الطا ف حسین بھی آئے روز لندن اور پاکستان میں موجود رابطہ کمیٹیوں میں نئے لوگوں کو شامل کررہے ہیں‘ بعض افراد جن میں کئی نامی گرامی رہنما بھی شامل ہیں ایک دھڑے کی شکل میں سابق صد رپرویز مشرف کے ساتھی بن جانے کا امکان ہے‘ الطاف حسین کا ساتھ دینے والوں کی تعداد صرف 20 فیصد تک رہ جائیگی اور ان میں سے زیادہ تر لوگ اپنے جرائم اور دیگر معاملات کی وجہ سے یا تو پابند سلاسل ہوں گے یا پھر سزا پوری کررہے ہوں گے۔

Tags: