ایم کیو ایم کو منفی سرگرمیوں میں ملوث ہونے سے روکا جائے،پرویز مشرف

July 22, 2015 3:50 pm0 commentsViews: 22

غیر ذمہ دارانہ بیانات دینے پر آصف زرداری او رالطاف حسین کا احتساب ہونا چاہیے
بھارت ہمارے ساتھ ہنگامے کر رہا ہے کشمیر، کراچی اور بلوچستان میں اس کے ملوث ہونے کے شواہد موجود ہیں
اسلام آباد( آن لائن) سابق صدر پرویز مشرف نے کہا ہے کہ اگر نواز شریف کی جگہ میں ہوتا تو شنگھائی تعاون تنظیم کانفرنس کے دوران بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی سے ہاتھ نہ ملاتا، سیدھا کرسی پر بیٹھ جاتا۔ ایم کیو ایم کے منفی سرگرمیوں میں ملوث لوگوں کو روکا جائے۔ الطاف حسین اور زرداری نے غیر ذمہ دارانہ بیانات دئیے۔ ان کا احتساب ہونا چاہئے، تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے سابق صدر جنرل ( ر) پرویز مشرف نے کہا کہ بھارت کے ساتھ تعلقات کے خلاف نہیں تاہم بھارت کے ساتھ دو طرفہ تعلقات برابری کی بنیاد پر ہونے چاہئیں۔ ہمارے دور حکومت میں واجپائی کے ساتھ اچھے تعلقات تھے، کوئی سرحدی کشیدگی نہیں تھی لیکن اب بھارت ہمارے ساتھ پنگا لے رہا ہے۔ کشمیر، کراچی اور بلوچستان میں ملوث ہونے کے شواہد موجود ہیں۔ گجرات میں200 مسلمانوں کے قتل عام کو بھارت دبانا چاہتا ہے۔ ایسے حالات میں بھارت کے ساتھ خوشگوار تعلقات رکھنا نا ممکن ہے۔

Tags: