دہشت گردوں کی مالی معاونت کرنے والے کراچی کے150 تاجروں کی گرفتاری کا فیصلہ

July 22, 2015 3:54 pm0 commentsViews: 18

حساس اداروں نے کراچی میں دہشت گردوں کے سہولت کاروں کی فہرست تیار کر لی جلد بڑا بریک ڈائون شروع کیا جائے گا
دہشت گردوں اور جرائم پیشہ افراد کی مالی مدد کرنے والوں کی فہرست میں تاجر اور صنعت کاروں کے علاوہ شہر کے معروف بلڈرز اور منی چینچرز کے نام بھی شامل ہیں، جن کے خلاف شواہد حاصل کر لیے گئے ہیں
سیکورٹی اداروں کے ہاتھوں گرفتار دہشت گردوں کی نشاندہی پر فہرستیں تیار کی گئی ہیں، دہشت گردوں اور ان کے مدد کاروں کیخلاف فیصلہ کن آپریشن کیلئے لائحہ عمل تیار کر لیا گیا
کراچی( کرائم ڈیسک) کراچی آپریشن کے فیصلہ کن مرحلے میں دہشت گردوں اور جرائم پیشہ افراد کی مالی معاونت کرنے اور انہیں سہولیات فراہم کرنے والوں کی گرفتاری کا فیصلہ کر لیا گیا ہے شہر کے150 تاجر اور صنعتکار ایسے ہیں جو مبینہ طور پر دہشت گردوں کے سہولت کار ہیں۔ ان کی گرفتاری کا فیصلہ کر لیا گیا ہے حساس ادارے کی جانب سے کراچی میں انتہا پسندوں کے سہولت کاروں کی جو فہرست تیار کی گئی ہے اس میں تاجر و صنعت کاروں کے علاوہ شہر کے چند بڑے بلڈرز اور منی چینجرز کے نام بھی شامل ہیں جن کی جلد گرفتاریاں متوقع ہے۔ ذرائع کے مطابق حساس اداروں نے جرائم پیشہ افراد کی معاونت کرنے اور ان کے سہولت کاروں کی فہرستیں تیار کرلی گئی ہیں اور تخریب کاروں کی فنڈنگ کرنے والوں کے خلاف بھی بڑا بریک ڈائون جلد متوقع ہے۔ اس ضمن میں تاجروں کی گرفتاری کا بھی امکان ہے۔ شہر میں ٹارگٹ کلنگ اور بھتہ خوری کے حوالے سے بھی معلومات جمع کی جا رہی ہیں کہ ملزمان کسے بھتے کیلئے اپنا ہدف بناتے، انہیں کس طرح کی دھمکیاں دیتے اور بھتہ نہ دینے پر ان کے خلاف کس طرح کارروائیاں کرتے تھے۔ اور یہ کہ بلاواسطہ یا بالواسطہ طور پر کون کون تخریب کاروں کی فنڈنگ میں ملوث ہے۔ جس سے جرائم میں ملوث افراد کو سپورٹ ملتی تھی۔ انتہائی با خبر زرائع کے مطابق قانون نافذ کرنے والے اداروں نے آپریشن کو 6 ماہ کے دوران منطقی انجام تک پہنچانے کا عزم کیا ہے۔ کرپشن میں ملوث افراد جو دہشت گردوں کی سپورٹ کرتے ہیں چاہے وہ پاکستان سے باہر ہیں انہیں ہر صورت واپس لا کر قوم و ملک کا پیسہ وصول کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ ذرائع کے مطابق ایک حساس ادارے نے وزارت داخلہ کے سربراہوں کو ایسے ارکان قومی اسمبلی و سینیٹرز ، ایم پی ایز ، پارٹی سربراہوں کے نام دئیے ہیں جو بڑی کرپشن میں ملوث ہیں۔ مالیاتی دہشت گردی میں ملوث ان افراد کو وطن واپس لا کر قانون کے مطابق عدالتوں میں پیش کیا جائے گا۔

Tags: