کراچی میں 6 ماہ کے دوران 971 افراد ہلاک ٹارگٹ کلنگ کم ترین سطح پر آگئی

July 23, 2015 5:32 pm0 commentsViews: 29

جنوری 2015 ء سے اب تک 479 ملزمان پولیس مقابلوں میں مارے گئے‘ 133 القاعدہ اور طالبان سے تعلق رکھتے تھے
رواں سال دہشتگردی کے 5 واقعات پیش آئے‘ بھتہ خوری کے 124 مقدمات درج ہوئے‘سندھ پولیس کی رپورٹ
کراچی( نیوز ڈیسک) سندھ کے دار الحکومت میں سال2015ء کے پہلے6 ماہ میں971 افراد ہلاک ہوئے جو گزشتہ دس سال کے مقابلے میں57 فیصد ہے۔ اس دوران بھتے کے124 مقدمات درج ہوئے جبکہ گزشتہ سال میںاسی عرصے میں242 مقدمات درج ہوئے تھے سندھ پولیس کی جانب سے صوبائی محکمہ داخلہ کو جمع کروائی جانے والی رپورٹ کے مطابق کراچی میں قتل اور ٹارگٹ کلنگ کی وارداتیں اپنی کم ترین سطح پر آگئی ہیں رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سال2015ء کے پہلے چھ ماہ میں یومیہ 27 افراد قتل ہوئے ہیں جبکہ 2014ء میں اسی عرصے میں یومیہ57 جبکہ 2013میں89 افراد قتل ہوئے۔ رپورٹ میں دعویٰ کیا ہے کہ جنوری2015ء سے اب تک 479 ملزمان بھی پولیس مقابلوں میں ہلاک ہوئے ہیں جن میں133 مبینہ طور پر القاعدہ اور کالعدم تحریک طالبان سے تعلق رکھتے تھے۔ اسی طرح گزشتہ سال دہشت گردی سے13 افراد ہلاک ہوئے جبکہ اس سال صرف5 واقعات سامنے آئے ہیں۔ اس سال اغواء برائے تاوان کے7 مقدمات درج ہوئے ہیں۔ جبکہ گزشتہ سال 31 مقدمات درج ہوئے، دوسری جانب رپورٹ کے مطابق چوری کے واقعات میں کچھ خاص کمی سامنے نہیں آئی ہے اور رواں سال پہلے 6 ماہ میں 1115 مقدمات درج ہوئے جبکہ گزشتہ سال 1428 مقدمات درج ہوئے تھے، رواں سال 346 جرائم پیشہ افراد جن میں53 ٹارگٹ کلر اور16 اغواء کار ، 81 لیاری گینگ وار کے ملزمان اور196 چور پولیس مقابلوں میں ہلاک ہوئے۔ جبکہ اس دوران4813 ملزمان بھی گرفتار ہوئے ہیں۔

Tags: