مرتضیٰ قتل کی صحیح تحقیقات نہیں ہوئیں متحدہ بھارت روابط کے ثبوت خود دیکھے‘ شعیب سڈل

July 23, 2015 6:05 pm0 commentsViews: 25

ایم کیو ایم کراچی میں قتل و غارت میں ملوث رہی‘ گرفتار کارکنوں نے ’’را‘‘ سے تربیت لینے کا اعتراف کیا
فاروق لغاری‘ مرتضیٰ کیس میں زرداری کا نام شامل کرنا چاہتے تھے‘ ملک ریاض ٹیکس چور ہیں‘ نجی ٹی وی کو انٹرویو
اسلام آباد( مانیٹرنگ ڈیسک) انٹیلی جنس بیورو کے سابق سربراہ اور سابق ٹیکس محتسب شعیب سڈل نے انکشاف کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایم کیو ایم کے بھارت سے روابط کے ثبوت خود دیکھے ، کراچی میں قتل و غارت میں متحدہ ملوث رہی، مرتضیٰ بھٹو کے قتل کی صحیح طریقے سے تحقیقات نہیں کی گئیں مرتضیٰ بھٹو کے مسلح ساتھیوں میں بعض’’را‘‘ کے تربیت یافتہ لوگ تھے۔ انہوں نے یہ بات ایک نجی ٹی وی کو انٹر ویو دیتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہا کہ مرتضیٰ بھٹو اپنے مسلح ساتھیوں کو چھڑانے کے لئے تھانے گئے تھے۔ ان کے بعض ساتھیوں میں ’’را‘‘ کے ایجنٹس بھی شامل تھے۔ میں نے ان مسلح ساتھیوں کو گرفتار کرنے کا حکم دیا تھا۔ سابق صدر سردار فاروق احمد خان لغاری یہ چاہتے تھے کہ اس کیس میں آصف زرداری کا نام بھی شامل کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ بے نظیر بھٹو کو یہ شک تھا کہ مرتضیٰ بھٹو کا قتل ایجنسیوں اور سردار فاروق لغاری نے مل کر کرایا ہے اور ایسا ان کی حکومت گرانے کے لئے کیا گیا ہے جبکہ سردار فاروق لغاری کا یہ شبہ تھا کہ مرتضیٰ بھٹو کا قتل آصف زرداری نے کرایا ہے۔ ایم کیو ایم سے متعلق شعیب سڈل نے کہا کہ ایم کیو ایم کے گرفتار افراد نے اس بات کا اعتراف کیا تھا کہ انہوں نے بھارتی خفیہ ایجنسی را سے تربیت لی ہے۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف کی حکومت نے 1997ء میں ایم کیو ایم کے لئے 75 کروڑ روپے دئیے تھے میں نے خود ایم کیو ایم کے بھارت سے روابط کے ثبوت دیکھے تھے۔ ارسلان افتخار سے متعلق انہوں نے کہا کہ ملک ریاض کا دعویٰ تھا کہ انہوں نے ارسلان افتخار پر40 کروڑ روپے کی سرمایہ کاری کی ہے تاہم تحقیقات میں ساڑھے 3 کروڑ روپے خرچ کرنا ثابت ہوا۔ انہوں نے کہا کہ ملک ریاض خود ٹیکس چور ہیں۔ اور119 ملین کا ٹیکس ادا نہ کرنے پر میں نے ان کو نوٹس بھیجا تھا۔

Tags: